Urdu News and Media Website

سپریم کورٹ میں سود کیس کا التوا ختم کرانے کیلئے اشرف عاصمی ایڈووکٹ نے تمام سیاسی،مذہبی جماعتوں کو خطوط لکھ دیئے

لاہور(نیوزنامہ)تحفظ ناموس رسالت ﷺ کمیٹی لاہور ہائی کورٹ بار کے چیئرمین صاحبزادہ میاں محمد اشرف عاصمی ایڈووکیٹ نے تمام سیاسی اور مذہبی جماعتوں کو سپریم کورٹ میں سود کے کیس کے التواء کو ختم کرنے اور سود کے خلاف فیصلے کے لیے خطوط لکھ دئیے ہیںاور چیف جسٹس آف پاکستان سے بھی سود کے حوالے سے زیر التوا کیس کے فیصلے کیے جانے کے لیے درخواست بھیج دی ہے۔ جن سیاسی و مذہبی جماعتوں کے سربراہوں کو خطوط لکھے گئے ہیں اُن میں پاکستان تحریک انصاف کے عمران خان، پاکستان مسلم لیگ ن کے شہباز شریف، پاکستان پیپلز پارٹی کے بلاول بھٹو زرداری، پاکستان عوامی تحریک کے طاہر القادری،جمیعت علمائے پاکستان کے صدر ابولخیر زبیر، جمیعت علمائے پاکستان پیر اعجاز ہاشمی گروپ کے پیر اعجاز ہاشمی، جماعت اسلامی کے امیر سراج الحق، جمعیت علمائے اسلام سمیع الحق گروپ کے امیر مولانا سمیع الحق، جمیعت علمائے اسلام فضل الرحمان گروپ کے مولانا فضل الرحمان، تحریک نفاذ فقہ جعفریہ کے علامہ ساجد علی نقوی، پاکستان فلاح پارٹی کے مرکزی صدر قاضی عتیق الرحمان،عوامی نیشنل پارٹی کے اسفند یار ولی، ایم کیو ایم کے ڈاکٹر فاروق ستار، پی ایس پی کے مصطفیٰ کمال،نیشنل پارٹی کے عبدالمالک بلوچ،پاکستان مسلم لیگ فنکشن کے پیر صاحب پگاڑا، پاکستان ملی مسلم لیگ کے سیف اللہ خالد،پاکستان مسلم لیگ ق کے چوہدری شجاہت حسین،پختون خواہ عوامی پارٹی کے محمود خان اچکزئی، قومی وطن پارٹی کے آفتاب احمد خان شیر پائو، نظام مصطفیٰ پارٹی کے حاجی حنیف طیب ودیگر قائدین شامل ہیں۔ جو خطوط اشرف عاصمی نے اِن جماعتوں کے قائدین کو بھیجے ہیں اُس میں کہا گیا ہے اسلام کے نام پرقائم ملک میں سودی نظام معیشت گذشتہ ستر سالوں سے جای ہے۔ اللہ پاک نے فرمایا ہے کہ سود لین والا اللہ پاک سے جنگ کرتا ہے۔ پاکستان معیشت میں برکت نہ ہونے کی وجہ بھی سودی نظام معیشت ہے۔

تبصرے