Urdu News and Media Website

وزیر خزانہ پنجاب ہاشم جواں بخت نے کسانوں کو خوشخبری سنا دی

لاہور(فاروق احمد بودلہ) صوبائی وزیر خزانہ مخدوم ہاشم جواں بخت نے پنجاب کے کسانوں کیلئے موثر اقدامات کی نوید سنا دی۔ آئندہ مالی سال میں زراعت کا بجٹ دوگنا سے زیادہ ہو گا۔

پیداوار میں اضافے کے لیے معیاری بیج کی دستیابی اور زراعت سے منسلک خدمات کو بہتر بنا رہے ہیں۔ کارپوریٹ سیکٹر کی ایگریکلچر سیکٹر میں دلچسپی بڑھانے کے لیے ٹیکس کی شرح16فیصد سے 1فیصد کر دی گئی ہے۔ لائیو سٹاک میں دودھ دینے والے جانوروں کی نسل میں بہتری اور منہ کھر کی بیماری کے خاتمے کے لیے خصوصی زونز کا قیام بجٹ 2021-22کا حصہ ہے۔ کسانوں کو سبسڈی اور دیگر مراعت کی فراہمی کے لیے کسان کارڈ کا داۂ کار بڑھایا جائے گا۔ بینکوں پر پبلک سیکٹر کا بوجھ کم کر کے پرائیویٹ سیکٹر کے لیے مواقع پیدا کیے جا رہے ہیں۔زرعی شعبہ سے منسلک افراد پنجاب روزگار سکیم سے استفادے کو یقینی بنائیں۔

صوبے میں تمام ٹیکسزکی وصولی اورچاروں صوبوں میں ٹیکس کی شرح میں یکسانیت کے موقف کی بھر پور حمایت کرتے ہیں۔ انفراسٹریکچر سیس کے خاتمے لیے محاصلات کا جائزہ لیا جا رہا ہے۔ فیصلہ ڈرائی پورٹس کی بحالی اور کاروبار میں افادیت کی بنیاد پر لیا جائے گا۔کاروباری طبقہ کو کرونا کے دوران ٹیکسوں میں دی گئی رعایت آئندہ مالی سال میں بھی جاری رکھی جائے گی۔ معاشی ترقی کے لیے کاروبار دوست پالیسیوں کا تسلسل برقرارنا رکھا گیا تو ایک بار پھر کئی سال پیچھے چلے جائیں گے۔

ان خیالات کا اظہار وزیر خزانہ پنجاب مخدوم ہاشم جواں بخت نے آج پاکستان فیڈریشن آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے زیر اہتمام پری بجٹ سیمینار سے خطاب کے دوران کیا۔ صوبائی وزیر نے کہا کہ ملک میں معاشی ترقی کی شرح میں بہتری وفاقی و صوبائی حکومت کے کاروبار دوست پالیسیوں کی بدولت ہو ممکن ہوئی۔ پی آر اے کے تحت محصولات کی شرح میں کمی کے باوجود وصولیوں میں بہتری آئی۔آئندہ بجٹ میں صوبائی محصولات میں دی گئی رعایت کے ساتھ ایف بی آر کی جانب سے دی گئی ریلیف بھی لاگو ہو گی۔

ایکسپورٹ میں اضافے کے لیے سٹیمپ ڈیوٹی کی شرح میں کمی اور ریگولیرٹی فریم ورک میں بہتری اور سروسز سیکٹر پر سرمایہ کاری میں اضافہ بھی معاشی ترقی کو یقینی بنائے گا۔ صوبائی وزیر نے شرکاء کو بتایا کہ آئندہ مالی سال کے بجٹ میں تعلیم اور صحت کے شعبہ پر بھی خصوصی توجہ دی گئی ہے۔ ضلعی سطح پر خدمات کی فراہمی کو بہتر بنایا جا رہا ہے۔

سیمینار کے دیگر شرکاء میں ریجنل چیئرمین پی ایف سی سی آئی چوہدری محمد سلیم بھلر، ایم پی چوہدری محمد شفیق، میاں انجم نثار، محمد علی میاں اور ٹریڈ باڈیز کے نمائندگان شامل تھے۔۔چوہدری محمد سلیم بھلر نے کسانوں کو مارک اپ میں خصوصی رعایت کا مطالبہ کرتے ہوئے پنجاب حکومت کے کاروبار دوست اقدامات کو سراہا۔ چیمبر کے نمائندگان نے GDPکی شرح میں اضافے پر مبارکباد پیش کرتے ہوئے زرعی شعبہ پر خصوصی توجہ، ٹیکسز کی شرح میں یکسانیت، انفراسٹریکچر سیس کے خاتمے اور چھوٹے کاروباروں کے تحفظ پر زور دیا۔

تبصرے