Urdu News and Media Website

آزادی صحافت کو ہر دور میں چیلنجز کا سامنا رہا: ثناء آغا خان

اپووا کی چیف آرگنائزر اور سیاسی وسماجی شخصیت ثناء آغا خان نے کہا ہے کہ آزادی صحافت
کو ہر دور میں مختلف چیلنجز کا سامنا رہا۔

حکومت صحافت سے وابستہ خواتین وحضرات کی یقینی حفاظت کیلئے ضابطہ اخلاق بنائے۔

پرتشدد واقعات اور عدم برداشت سے نجات حاصل کرنے کیلئے رواداری کو فروغ دینا ہوگا۔
حکمران ، اپوزیشن رہنماء ، سرکاری حکام اور عوام اپنے اندر تنقید برداشت کرنے کا
حوصلہ پیدا کریں۔ اپنے ایک بیان میں ثناء آغا خان نے مزید کہا کہ اختلاف رائے
کو عداوت نہ بنایا جائے کیونکہ اس سے تو بہت کچھ نیا سیکھنے کو ملتا ہے۔ صحافی معاشرے
میں ہونیوالے واقعات رپورٹ کرتے ہیں جو ان کے فرض منصبی میں شامل ہے اسلئے
انہیں ڈرانا ، دھمکانا ، دبانا یا رشوت آفر کرنا درست نہیں۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان سمیت
دنیا بھر میں صحافیوں پر تشدد اور انہیں قتل کرنے کے واقعات ناقابل برداشت ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:

روائتی صحافت اور صحافتی طرفین!

حکومت اور سکیورٹی ادارے صحافت کی آزادی کے دشمن عناصر کیخلاف سخت ایکشن لے۔
انہوں نے کہا کہ مرد حضرات کے مقابلے میں صحافت کے میدان میں سرگرم خواتین کو
زیادہ دباؤ کا مقابلہ کرنا پڑتا ہے۔ خواتین کا خطرات کے باوجود میدان صحافت میں قدم
جمانا خوش آئند ہے۔ سوشل میڈیا کے باوجود صحافت اور اخبارات کی اہمیت برقرار ہے۔
انہوں نے کہا کہ اپووا صحافیوں کی فلاح و بہبود کیلئے اپنا کردار ادا کرتا رہے گا۔
صحافی انفرادی اور اجتماعی مفادات کی حفاظت کیلئے اپنی صفوں میں اتحاد برقرار رکھیں۔
لاہور (نیوز نامہ)

تبصرے