Urdu News and Media Website

چارے کا گھپلہ،لالو پرساد پکڑے گئے

نئی دہلی (مانیٹرنگ ڈیسک)انڈیا کے معروف سیاست دان اور بہار کے سابق وزیر اعلیٰ لالو پرساد یادو کو چارے کے گھپلے کے نام سے مشہور مقدمے میں رانچی کی ایک خصوصی عدالت نے مجرم قرار دیا ہے۔اس کیس میں عدالت نے لالو پرساد کو 1991 اور 1994 کے درمیان ریاستی خزانے سے 89.27 لاکھ روپے کی خرد برد کا مجرم پایا۔ چارے کے گھپلے کے نام سے مشہور اس سکینڈل میں لالو پرساد یادو پر 900 ملین روپے کی خرد برد کا الزام ہے اور ان پر مختلف کیسز قائم ہیں۔ریاستی خزانے سے یہ فنڈ غریب افراد کو مویشیوں کے لیے چارہ خریدنے کی مد میں امداد دینے کے لیے بنایا گیا تھا۔عدالت نے لالو پرساد سمیت 15 افراد کو مجرم قرار دیا ہے جبکہ اسی مقدمے میں بہار کے سابق وزیراعلیٰ جگن ناتھ مشرا سمیت 6 افراد کو بری کردیا گیا ہے۔فیصلہ آتے ہی پولیس نے لالو پرساد سمیت 15 ملزمان کو عدالت کے احاطے سے حراست میں لے لیا اور اب عدالت 3 جنوری کو انھیں سزا سنائے گی۔

تبصرے