Urdu News and Media Website

ن لیگی رہنما خواجہ آصف کو نیب نے گرفتار کر لیا

اسلام آباد(صابر مغل)چئرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال کی جانب سے گرفتاری کی باقاعدہ اجازت دینے کے بعد سابق وفاقی وزیر اور مسلم لیگ ن کے اہم رہنما خواجہ آصف کو نیب نے اسلام آباد سے گرفتار کر کے نیب آفس راولپنڈی منتقل کر دیا۔
خواجہ آصف کو 26 کروڑ روپے سے زائد غیر قانونی اثاثہ جات کے الزام میں گرفتار کیا گیا ہے
وہ ان اثاثہ جات بارے نیب کو مطمئن نہیں کر سکے تھے۔خواجہ آصف کراچی میں پیپلزپارٹی کی جانب سے استعفوں کے حوالے سے مؤقف سامنے آنے کے بعد پارلیمنٹ لاجز میں احسن اقبال کی رہائش گاہ پر مسلم لیگی رہنماؤں کے اجلاس میں شرکت کے بعد اجلاس کے اختتام پر اس وقت گرفتار کیا گیا جب وہ مریم نواز و دیگر پارٹی رہنماؤں کے ساتھ باہر موجود تھے۔
خواجہ آصف دو مرتبہ تین رکنی تفتیشی ٹیم کے سامنے پیش ہوئے تھے تاہم وہ اثاثہ جات سے متعلق ٹیم کو مطمئن کرنے میں ناکام رہے۔
بعد میں نہ تو خواجہ آصف نیب ٹیم کے سامنے پیش ہوئے اور نہ ہی بھیجے گئے سوالات کا جواب دیا۔
نیب نے اس بڑی گرفتاری پر سپیکر قومی اسمبلی کو بھی آگاہ کر دیا۔
اس وقت ڈاکٹرز کی ٹیم خواجہ آصف کا طبی معائنہ کرنے میں مصروف ہے ۔انہیں صبع نیب عدالت پیش کرنے کے بعد راہداری ریمانڈ لینے کے بعد نیب آفس لاہور منتقل کر دیا جائے گا۔
خواجہ آصف کی گرفتاری کے بعد مریم نواز نے جارحانہ میڈیا ٹاک میں سخت مؤقف اختیار کرتے ہوئے نیب کو دھمکی دے ڈالی کہ اگر نیب نے انہیں فوری رہا نہ کیا گیا تو مسلم لیگ کی طرف سے سخت ایکشن لیا جائے گا اور پنجاب اسمبلی سے فوری مستعفی بھی ہوا جا سکتا ہے۔

تبصرے