Urdu News and Media Website

لاہور ہائیکورٹ نے ایل ڈبلیو ایم سی کو ترک کمپنیوں کی صفائی مشینری استعمال کرنے سے روک دیا

لاہور(نیوزنامہ) لاہور ویسٹ مینجمنٹ کمپنی کی جانب سے ترک کمپنیوں البیراک اور اوزپاک کی مشینری کو غیر قانونی قبضے میں لینے کے خلاف درخواست پر لاہور ہائیکورٹ نے ایل ڈبلیو ایم سی کو کنٹریکٹر کمپنی کی مشینری اور فیلڈ گاڑیاں صفائی آپریشنز میں زیرِ استعمال لانے سے روک دیا۔ایل ڈبلیو ایم سی 29 دسمبر تک مشینری کو استعمال نہ کرنے کا سٹے آرڈر بھی جاری کر دیاگیا ہے۔
ہائیکورٹ نے پنجاب حکومت اور ایل ڈبلیو ایم سی کو بھی نوٹسز جاری کرتے ہوئے تفصیلی جواب طلب کر لیا۔
واضح رہے کہ 20 دسمبر کی رات کی پچھلی پہر لاہور ویسٹ مینجمنٹ نے پولیس افسران کے ہمراہ ترک کمپنیوں البیراک اور اوزپاک کی ورکشاپس پر بغیر کسی قانونی نوٹس کے دھاوا بولاجبکہ مشینری اور فیلڈ گاڑیوں کو قبضے میں لے لیا۔
ورکشاپس کے ملازمین کو زدوکوب کیا گیا جبکہ انہیں زبردستی ورکشاپس کی حدود سے باہر نکال پھینکا۔
اس کے جوابی عمل میں البیراک انتظامیہ نے لاہور ہائیکورٹ سے رجوع کیا تھا۔
مزید براں، ترک کمپنیوں کی جانب سے ایل ڈبلیو ایم سی کا یہ انتہائی اقدام پاکستان میں ترک قونصلیٹ کے ساتھ ساتھ ترک وزیرِ خارجہ کے سامنے بھی پیش کیا گیاہے۔
ترکی میں واقع البیراک ہیڈ آفس کے افسران نے بھی ترکی کی حکومت کے اعلی سطحی افسران سے رابطہ قائم کیا ہے۔
واضح رہے کہ لاہور میں موجود ترک قونصلیٹ ترک کمپنیوں کے ایل ڈبلیو ایم سی کے ساتھ معاملات کو نمٹانے کیلئے کوشاں ہے۔

تبصرے