Urdu News and Media Website

وزیراعظم کی آمد پر طبی عملے کا انوکھا احتجاج، ویڈیو وائرل

اس وقت دنیا بھر میں کرونا وائرس کی تباہ کاریوں کا سلسلہ جاری ہے اور اس موضی وائرس سے نمٹنے کے لیے ڈاکٹرز اور طبی عملہ فرنٹ لائن فائٹرز ہیں لیکن کئی ممالک میں ان کو سہولیات کی فراہمی میں لاپرواہی اور فقدان دیکھا جارہا ہے۔

یورپی ملک بیلجیئم کے ڈاکٹرز اور طبی عملہ ناقص سہولیات اور کم تنخواہیں ملنے کے باعث پریشانی سے دوچار ہیں۔
یہی وجہ ہے کہ جب بیلجیئم کی وزیراعظم صوفی ویلیئم برسلز میں
سینٹ پریئر اسپتال کا دورہ کرنے پہنچیں تو اسپتال کے طبی عملے
نے ان کی آمد پر ناخوشگواری کا مظاہرہ کرتے ہوئے انوکھا احتجاج کیا۔

جیسے ہی وزیراعظم صوفی ویلیئم اسپتال پہنچیں تو تمام طبی عملے نے
ان کے استقبال پر خوش آمدید کہنے کے بجائے
پیٹ پھیر کے خاموشی سے احتجاج کیا۔

طبی عملے کا وزیراعظم کے خلاف یہ احتجاج کم تنخواہیں،
میڈیکل بجٹ میں کٹوتی، کرونا وائرس کے علاج
کے لیے حفاظتی سامان کی فراہمی میں لاپرواہی اور
نرسنگ پینل کے لیے غیر تجربے کار افراد کو
بھرتی کرنے پر کیا گیا۔

یہ بھی پڑھیں: ہوشیار ہوجائیں، ماسک نہ پہننے پر 55ہزار امریکی ڈالرکا جرمانہ

وزیراعظم کے خلاف طبی عملے کے اس انوکھے احتجاج
کی ویڈیو سوشل میڈیا پر بھی خوب وائرل ہو رہی ہے۔
خیال رہے کہ بیلجیئم میں اب تک کرونا وائرس سے متاثرہ افراد
کی تعداد55 ہزار سے تجاوز کرچکی ہےاور اب تک 9ہزار سے
زائد افراد اس موضی وائرس کے باعث لقمہ اجل بن چکے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: ریسٹورینٹ میں سماجی دوری کیلئے مجسموں کا استعمال

دوسری جانب دنیا بھر میں اب تک کرونا وائرس سے
متاثرہ افراد کی تعداد 48لاکھ 20ہزارسے تجاوز کر گئی ہے جبکہ
اب تک 3لاکھ16ہزار سے زائد افراد ہلاک ہوچکےہیں۔
برسلز(ویب ڈیسک)

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.