Urdu News and Media Website

کرونا وائرس کب ختم ہوگا؟ عالمی ادارہ صحت کا بڑا بیان

کرونا وائرس شاید کبھی ختم نہ ہو، دنیا کو اس کے ساتھ ہی جینا سیکھنا ہوگا، عالمی ادارہ صحت(ڈبلیو ایچ او) نے خبردار کر دیا۔

عالمی ادارہ صحت (ڈبلیو ایچ او)کا کہنا ہے کہ کرونا وائرس شاید کبھی بھی ختم نہ ہو اور دنیا کو اس کے ساتھ ہی جینا پڑے گا۔

تفصیلات کے مطابق ڈائریکٹر ایمرجنسی ڈبلیوایچ او مائیکل ریان کا
جینیوا میں ورچوئل پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہنا تھا کہ
انسانی آبادی میں ایک نیا وائرس داخل ہواہے
لہذا پیش گوئی کرنا مشکل ہےکہ
وائرس پر کب تک قابو پایا جا سکتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: عالمی وبا کرونا وائرس کی کتنی اقسام، زیادہ خطرناک کون سی ہے

ڈائریکٹر ڈبلیو ایچ او نے دنیا کو خبردار کرتے ہوئے بتایا کہ
ایچ آئی وی کی طرح شاید کرونا بھی کبھی ختم نہ ہو اور
دنیا کی پوری آبادی کو اس کے ساتھ ہی رہنا پڑے گا۔
ان کا کہنا تھا کہ کرونا ہمارے معاشرے میں ایک اور
مستقل وبا کی شکل اختیارکر سکتا ہے، جیسے ایچ آئی وی
ختم نہیں ہوا اور ہمیں اس کےساتھ رہنا پڑا۔

 یہ بھی پڑھیں: کیا کرونا وائرس نوٹوں کے ذریعے بھی منتقل ہو سکتا ہے؟

انہوں نے مزید کہا کہ پابندیوں میں نرمی سے وبا کی
دوسری لہر نہ آنے کی ضمانت نہیں دی جاسکتی،
بہت سےممالک چاہیں گےکہ پابندیوں
سے باہر آئیں، لیکن ہماری سفارش ہے
کسی بھی ملک میں انتباہ اعلیٰ سطح پر ہونا چاہیے۔

یہ بھی پڑھیں: دنیا میں ’’کرونا ہیئر اسٹائل‘‘ کے چرچے

واضح رہے کہ دنیا بھر میںکرونا وائرس کی تباہ کاریوں
کاسلسلہ جاری ہے اور اب تک 44 لاکھ 29 ہزار
سے زائد افراد متاثر جب کہ 2 لاکھ 98 ہزار سے
زائدلقمہ اجل بن چکے ہیں۔
جنیوا(مانیٹرنگ ڈیسک)

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.