Urdu News and Media Website

کرونا وائرس پر تحقیق کرنے والا چینی پروفیسر امریکا میں قتل

کرونا وائرس کے حوالے سے اپنی تحقیق کے انتہائی اہم نتائج کے قریب پہنچ جانے والے چینی پروفیسر کو امریکہ میں قتل کر دیا گیا ۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق امریکا کی پٹس برگ یونیورسٹی میں کرونا وائرس پر تحقیق کرنے والے ایک چینی پروفیسر کو مبینہ طور پر قتل کر دیا گیاہے۔

پولیس کا کہنا ہے کہ اسسٹنٹ پروفیسر بنگ لو اپنے گھر میں
مردہ حالت میں پائے گئے گئے اور ان سر اور گلے میں
گولیوں کے نشانات پائے گئے۔
پولیس کا کہنا ہے کہ پروفیسر لو کے گھر کے قریب ایک کار میں
ایک اور شخص مردہ حالت میں ملا ہے اور مبینہ طور پر اسی شخص
نے پروفیسر لو کو ان کے گھر میں قتل کرنے کے بعد
اپنی کار میں خودکشی کرلی۔

یہ بھی پڑھیں: ووہان میں کرونا وائرس امریکی فوج نے پھیلایا:چین

پولیس کا ماننا ہے کہ دونوں افراد ایک دوسرے سے کو جانتے تھے
مگر اس بات کے شواہد موجود نہیں ہے کہ پروفیسرلو
کو چینی شہری ہونے کی وجہ سے قتل کیا گیا۔
دوسری جانب یونیورسٹی کا کہنا ہے کہ مقتول پروفیسر کرونا وائرس
کے حوالے سےاپنی تحقیق میں انتہائی اہم نتائج کے
بالکل قریب پہنچ چکے تھے۔

یہ بھی پڑھیں: عالمی وبا کرونا وائرس کی کتنی اقسام، زیادہ خطرناک کون سی ہے
پروفیسر لو کے یونیورسٹی میں موجود ساتھیوں کا کہنا ہے کہ
پروفیسر لو کرونا وائرس سارس کوو2 کے حوالے سے انتہائی اہم
تحقیق کر رہے تھے اور وہ اس بارے میں
بہت ہی اہم نتائج کے قریب پہنچ چکے تھے۔

واضح رہے کہ کرونا وائرس نے پوری دنیا میں تباہی مچائی

ہوئی ہے اور تقریباََ دنیا کے تمام ممالک ہی اس موضی وائرس

سے متاثر ہیں دنیا بھر میں اب تک کرونا وائرس سے 37لاکھ53ہزار

سے زائد افراد متاثر ہوچکے ہیں جبکہ اب تک 2لاکھ 59ہزار

سے زائد افراد لقمہ اجل بن چکے ہیں۔
واشنگٹن (مانیٹرنگ ڈیسک)

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.