Urdu News and Media Website

اسکینڈل بوائے کو پیشکش چھپانا مہنگا پڑگیا،کرکٹ کے دروازے بند

میچ فکسنگ کی پیشکش کے حوالے سےپاکستان کرکٹ بورڈ(پی سی بی ) نےکرکٹر عمر اکمل کے خلاف فیصلہ سنا دیا،3سال کی پابندی عائد۔ 

پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) نے میچ فکسکنگ کی پیشکش سے متعلق ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کے کیس میں کرکٹر عمر اکمل پر 3 سال کی پابندی عائد کردی۔

کرکٹر عمراکمل پر 3سال کے لیے ہرقسم کی کرکٹ پرپابندی عائد ہوگی۔

 پی سی بی ڈسپلنری پینل نےعمراکمل کےخلاف کیس کا فیصلہ سنایا 

جس کے سربراہ جسٹس ریٹائرڈ فیصل میراں چوہان ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: عمر اکمل پر بڑا الزام ، پی ایس ایل سے چھٹی

20 فروری کو پاکستان کرکٹ بورڈ نے اینٹی کرپشن کوڈ کی 

دفعہ 4.7.1 کے تحت عمر اکمل کو فوری طور پر معطل کر دیا تھا

 اور اینٹی کرپشن یونٹ کی جانب سے جاری تحقیقات شروع کی 

گئی تھیں۔ اس معطلی کی وجہ سے عمر اکمل پاکستان سپر لیگ 5 

میں بھی حصہ نہیں لے سکے تھے۔

جس کے بعد یہ خبریں سامنے آئیں کہ عمر اکمل کو بکی نے میچ فکسنگ 

کی پیشکش کی تاہم وہ اس کی اطلاع بروقت 

پی سی بی کو دینے میں ناکام رہے۔

پی سی بی کی تحقیقات کے مطابق پی ایس ایل 2020سے پہلے 

بکی نے عمر اکمل سے رابطہ کیا اور انہیں فکسنگ کی پیشکش کی۔

ٹھوس شواہد کے ہاتھ لگنے کے بعد پی سی بی نے کارروائی کی اور

 پھر عمرل اکمل نے بھی بکی سے رابطہ ہونے کا اعتراف کرلیا

 تاہم پی سی بی یا ٹیم منیجمنٹ کو بروقت آگاہ نہ کرنے پر 

ان کی معطلی برقرار رکھی گئی۔

یہ بھی پڑھیں: کدھرہےچربی؟۔۔عمراکمل کاانوکھااحتجاج

20 مارچ کو کرکٹر عمراکمل پر اینٹی کرپش کوڈ کی خلاف ورزی

 کی فردجرم عائد کی گئی اور عمراکمل کو 31 مارچ تک 

جواب داخل کرنے کی مہلت دی گئی۔

ٹیسٹ کرکٹر کو اینٹی کرپشن کوڈ 4.2.2 کے تحت چارج کیا گیا 

اور ان پر الزام عائد کیا گیا کہ انہوں نے

 دو بار قانون کی خلاف ورزی کی۔

لاہور(سپورٹس ڈیسک)

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.