Urdu News and Media Website

میڈیا ہندو اور مسلمانوں کے بیچ نفرت پیداکر رہا ہے:سابق بھارتی پارلیمنٹ ممبر

بھارتی پارلیمنٹ کےسابق ممبر ابو عاصم اعظمی کا کہنا ہے کہ کرونا وائرس کی وجہ سے ان مشکل حالات میں بھارت کو ہندو اور مسلمانوں کے درمیان نفرت کی بجائے پیار و محبت پید ا کیا جائے ،حکومت کو اس خطرناک وبا کیلئے اہم اقدامات کرنے ہوں گے۔

معروف بھارتی سیاسی و سماجی شخصیت و سابق ممبر بھارتی پارلیمنٹ و صدر سماج وادی پارٹی ابو عاصم اعظمی نے کہا کہ کرونا وائرس کے خاتمے کیلئے اہم اقدامات کی ضرورت ہے انہوں نے کہا کہ حکومت وقت ان سخت حالات میں ہندوستانی عوام کو ریلیف فراہم کرنے میں اہم کردار ادا کریں۔
کرونا ملک میں جاری لاک ڈاون کی وجہ سے عوام شدید مشکلات کا شکار ہے
روزگار بند ہے عوام مشکل سے وقت گزراتے ہے اس وقت غریب اور یتیم لوگوں
کے ساتھ مالی مدد کریں تا کہ غریب یتیم اور بے سہارا لوگوں کو درپیش
مسائل و مشکلات حل ہو سکے۔ سابق ممبر ہندوستانی پارلیمنٹ ابو عاصم اعظمی نے
بین الاقوامی گلوبل ٹائمز میڈیا یورپ کے ساتھ ایک اخباری بیان میں کہا کہ
کرونا وبا کے اس موقع پر ہندوستانی عوام غربت کی وجہ سے خودکشیوں پر مجبور ہے

یہ بھی پڑھیں: مودی حکومت کے مسلم کش اقدامات پر بھارتی مصنفہ پھٹ پڑیں

انہوں نے تمام سیاسی و سماجی اداروں سے مطالبہ ہے کہ غریب اور بے سہارا لوگوں کی

بھرپور مدد کریں تا کہ عوامی مسائل بروقت حل ہو سکے اور عوام کو ریلیف فراہم ہو سکے۔
انہوں نے کہا کہ اس وقت میڈیا صرف تبلیغی جماعت کو نشانہ بنا رہی ہے اور سرکار کے
تلوے چاٹ کر ہندو اور مسلمانوں کے بیچ نفرت پیدا کر رہی ہے میڈیا کو خبردار کرنا
چاہتا ہوں کہ میڈیا کو اس طرح نہیں کرنا چاہئے میڈیا کو غریب کے حق
کیلئے آواز بلند کرنی چاہیے انہوں نے کہا کہ ہندوستان میں ہندو اور مسلمانوں
کے درمیان نفرت پیدا کرنے کی بجائے پیار و محبت پیدا کرنا ضروری ہے تا کہ
مسلمانوں اور ہندو کے درمیان جاری نفرت کا خاتمہ ہو سکے

یہ بھی پڑھیں: بی جے پی قیادت مسلمانوں کے خلاف نازیوں کا رویہ اپنارہی ہے: وزیراعظم عمران خان

انہوں نے کہا کہ کرونا وائرس کے اس سخت حالات میں بھی مسلمانوں کے ساتھ ظلم و زیادتی جاری
ہے جو افسوس ناک ہے حکومت مسلمانوں کے ساتھ جاری ظلم و ستم بند کرے
اس وقت اللہ کی بارگاہ میں کرونا وائرس جیسے وبا اور آفات سے تمام انسانیت کو
نجات ملنے کیلئے دعائیں کرنی چاہئے تا کہ کرونا وائرس سے مسلمانوں کو نجات مل سکے۔
نئی دہلی( اکرام الدین)

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.