Urdu News and Media Website

دفعہ 144 کے نفاذ میں پولیس کے ہی ایس ایچ او کی شادی

ایس ایچ او ٹھینگی کی دفعہ 144 نافذ ہونے کے باوجود شادی،معطل کر کے لائن حاضر کر دیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق پنجاب میں کرونا وائرس کے خطرات کے پیشِ نظر صوبے بھر میں دفعہ 144 نافذ کی گئی تھی،جس کی ایس ایچ او ٹھینگی کی خلاف ورزی پر ایس ایچ او کے خلاف مقدمہ درج کر لیا گیا۔

ایس ایچ او ٹھینگی کی شادی کی تقریب میں دفعہ 144 کی خلاف ورزی پر مقدمہ درج کیا گیا۔

یہ بھی پڑھیں: کرونا وائرس نے پاکستان میں پنجے گاڑ لیے ،تعداد184ہوگئی

پولیس ترجمان کے مطابق مقدمہ نمبر 141/20 تھانہ مترو میں درج کیا گیا ہے۔
پولیس ترجمان کا کہنا ہے کہ ایس ایچ او ٹھینگی نے دفعہ 144 کی خلاف ورزی کرتے ہوئے ولیمہ کی تقریب منعقد کی تھی۔
جس ایس ایچ او ٹھینگی کے خلاف محکمانہ کارروائی کرتےہوئے معطل کرکے لائن حاضر کردیا گیاہے۔
پولیس ترجمان کا مزید کہنا تھا کہ پولیس آفیسر ہو یا عام آدمی کوئی کتنا ہی بااثر کیوں نہ ہو
قانون سے بالا تر نہیں ہو سکتا۔

یہ بھی پڑھیں: طوفانی بارشوں کے نئے سلسلے نے خطرے کی گھنٹی بجادی

دوسری جانب اوکاڑہ کے نواحی علاقے میں پولیس کا شادی پر کریک ڈاؤن،
باراتی گرفتار جبکہ دلہا فرار ہونے میں کامیاب ۔
تفصیلات کے مطابق تھانہ چورستہ میاں خاں پولیس کو اطلاع ملی کہ
گاؤں جلے والا میں حکومت کے واضح احکامات کے باوجود
شادی کی تقریب جاری ہے جو دفعہ 144 کی بھی کھلم کھلا خلاف ورزی ہے

یہ بھی پڑھیں: چودھری نثار کے بعد خواجہ آصف کی بھی ن لیگ سے چھٹی؟

جس پر پولیس نے بروقت ایکشن لیتے ہوئے متعدد باراتیوں کو گرفتار کر لیا
جبکہ دلہا فرار ہونے میں کامیاب ہوگیا۔پولیس کا کہنا ہے کہ
دلہا سمیت دیگر افراد کے خلاف مقدمہ درج کر لیا گیا ہے۔

وہاڑی/اوکاڑہ(صابر مغل)

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.