Urdu News and Media Website

اٹلی میں کرونا وائرس کی ہلاکت خیزی،مزید 349افراد ہلاک

اٹلی میں کرونا وائرس کی ہلاکت خیز ی کا سلسلہ جاری ،گزشتہ 24گھنٹوں میں مزید 300سے زائدافراد ہلاک ،مجموعی تعداد 2100سے تجاوز کر گئی۔

اٹلی میں کرونا وائرس کی تباہ کاریوں کا سلسلہ جاری ہے، گزشتہ 24 گھنٹے میں مزید 349 افراد ہلاک ہوگئے ،جس کے بعد ملک بھر میں ہلاکتوں کی تعداد 2100سے بھی تجاوز کرگئی ہے۔
غیر ملکی میڈیا کے مطابق یورپی ملک اٹلی میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران
مزید 3233 افراد میں کرونا وائرس کی تصدیق ہوئی ہے جس کے بعد
متاثرہ افراد کی تعداد 27980 تک جاپہنچی ہے۔

اٹلی میں کرونا وائرس کے زیرعلاج مریضوں کی تعداد چین سے بھی کئی گنا بڑھ چکی ہے
اور اس وقت 23073 افراد زیر علاج ہیں جبکہ چین میں اِس وقت زیر علاج
مریضوں کی کل تعداد 9848 ہے۔

یہ بھی پڑھیں: کرونا وائرس نے پاکستان میں پنجے گاڑ لیے ،تعداد184ہوگئی

رپورٹس کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹوں میں اٹلی میں کرونا وائرس سے
مزید 349 افراد ہلاک ہوئے ہیں جس کے بعد ہلاکتوں کی تعداد بھی 2158 ہوگئی ہے۔

یاد رہے کہ اٹلی میں اِس وقت سخت ترین اقدامات کے ساتھ پورا ملک لاک ڈاؤن ہے۔

یہ بھی پڑھیں: عالمی وبا کرونا وائرس کی کتنی اقسام، زیادہ خطرناک کون سی ہے

واضح رہے کہ چین سے پھیلنے والا کرونا وائرس اب دنیا کے 150سے زائد ممالک

کو اپنی لپیٹ میں لے چکا ہے۔جس سے اب تک 6ہزار668سے زائد
افراد ہلاک ہوچکے ہیں جبکہ متاثرہ افراد کی تعداد 1لاکھ73ہزار سے تجاوز کر چکی ہے۔
جن میں سے 77ہزار 700سے زائد افراد صحت یاب ہوچکے ہیں۔

واضح رہے کہ پاکستان میں اب تک کرونا وائرس کے کیسز کی تعداد193ہوچکی ہے ۔
جن میں سندھ سے 155، خیبر پختونخوا میں 15، بلوچستان میں 10، اسلام آباد میں 4،
گلگت بلتستان میں 3 اور پنجاب میں کرونا وائرس کے5کیسز رپورٹ ہوئے ہیں۔4

یہ بھی پڑھیں: پاکستان میں کرونا وائرس :ماسک نہیں مل رہا تو آپ کو کیا کرنا چاہیے ؟

اس کی علامات کیا ہیں؟

عالمی ادارہ صحت(ڈبلیوایچ او) کے مطابق کورونا وائرس کی علامات میں
سانس لینے میں دشواری، بخار، کھانسی اور نظام تنفس سے جڑی دیگر بیماریاں شامل ہیں۔

اس وائرس کی شدید نوعیت کے باعث گردے فیل ہوسکتے ہیں،
نمونیا اور یہاں تک کے موت بھی واقع ہوسکتی ہے۔

یہ بھی پڑھیں: کرونا وائرس کیا ہے؟ کہاں سے آیا اور کیسے پھیلا؟

ماہرین صحت کی ہدایات

ماہرین نے شہریوں کرونا وائرس سے بچاؤ کیلئے عالمی ادارہ صحت کی سفارشات
کے مطابق ہدایات دیں ہیں جن ماہرین کا کہنا ہے کہ لوگوں کو بار بار صابن سے
ہاتھ دھونے چاہئیں اور ماسک کا استعمال کرنا چاہیئے اور بیماری کی صورت میں
ڈاکٹر کے مشورے سے ادویات استعمال کرنی چاہیئے۔

روم(مانیٹرنگ ڈیسک)

تبصرے