Urdu News and Media Website

جنوبی پنجاب کیلئے وزیراعلیٰ سیکرٹریٹ کہاں بنے گا، فیصلہ ہو گیا

وفاقی حکومت نے جنوبی پنجاب صوبہ بنانے کا فیصلہ کر لیا،نئے صوبے کا بل جلد اسمبلی میں پیش کرنے بھی اعلان کر دیا،جبکہ جنوبی پنجاب کیلئے وزیراعلی سیکرٹریٹ کہاں بنے گا اس کا بھی فیصلہ ہوگیا ہے۔

ذرائع کے مطابق وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت اجلاس میں صوبہ جنوبی پنجاب کے لیے بہاولپور میں وزیر اعلیٰ سیکرٹریٹ بنانے کا فیصلہ کر لیا گیا۔
اجلاس میں وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار سمیت جنوبی پنجاب سے تعلق رکھنے والے ارکان اسمبلی نے شرکت کی۔
اس سیکرٹریٹ کے لیے ساڑھے 3 ارب روپے کے فنڈز مختص کئے جائیں گے۔

یہ بھی پڑھیں: چودھری نثار کے بعد خواجہ آصف کی بھی ن لیگ سے چھٹی؟

اجلاس کے بعد وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی اور معاون خصوصی فردوس عاشق اعوان نے
میڈیا کو بتایا کہ بہاولپور میں وزیر اعلیٰ سیکرٹریٹ کے قیام کا فیصلہ تحریک انصاف کا
جنوبی پنجاب صوبہ کی جانب پہلا قدم ہے۔

یہ بھی پڑھیں: گرمیوں میں بجلی کا بڑا بحران، خطرے کی گھنٹی بج گئی

ابتدائی طور پر جنوبی پنجاب میں ایڈیشل چیف سیکرٹری اور ایڈیشل آئی جی کو
تعینات کیا جائے گا جن میں سے ایک افسر بہاولپور جبکہ دوسرا ملتان موجود رہے گا ۔
وفاقی وزراء کے مطابق نئے صوبے کے قیام کا مقصدجنوبی پنجاب کی محرومیوں کو
ختم کرنا ہے آئندہ آبادی کے تناسب سے 35 فی فنڈزجنوبی پنجاب میں خرچ ہوں گے
جبکہ ماضی میں یہ فنڈز وہاں کی بجائے لاہور وغیرہ میں لگا دیے جاتے تھے ۔

یہ بھی پڑھیں: پنجاب میں کرونا وائرس ہے یا نہیں؟ وزیرصحت پنجاب نے واضح کر دیا

نئے وزیر اعلیٰ سیکرٹریٹ کے لیے 1350 مزید افراد کی تعیناتی عمل میں آئے گی۔
اسلام آباد (صابر مغل )

تبصرے