Urdu News and Media Website

ادلب: ترکی کی جوابی کاروائی، شامی فوج کے 2لڑاکا طیارے تباہ

شامی صوبے ادلب میں چند روز قبل شامی فضائیہ کی کاروائی کے بعد حالات کشیدہ ہوگئے،ترکی نے جوابی کاروائی کرتے ہوئے شامی فوج کے 2لڑاکا طیارے مار گرِائے ۔

شامی صوبے ادلب میں ترکش ائیر فورش نے شامی فوج کےحملوں کا بدلہ لیتے ہوئے جوابی کاروائی میں شام کی سرکاری افواج کے 2 لڑاکا طیارے تباہ کردیے۔

تفصیلات کے مطابق ترک فورسز پر شامی حکومتی افواج کے حملوں کے بعد
ترکی نے شامی صوبے ادلب میں آپریشن’’اسپرنگ شیلڈ‘‘ کا آغاز کردیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: شامی فضائیہ کی کاروائی،33 ترک فوجی جاں بحق

ترک وزارت دفاع کے مطابق آپریشن گذشتہ دنوں ترک فوج پر
شامی حکومتی فورسز کے حملوں کے بعد شروع کیا گیا ہے، آپریشن میں
شامی فوج کے 2 روسی ساختہ ایس یو 24 لڑاکا طیارے مار گرائے ہیں۔

ترکی کا کہنا ہے کہ آپریشن کے دوران ترکی کا ایک ڈرون طیارہ بھی تباہ ہوا ہے۔

ترکی کے وزیر دفاع کا کہنا ہے کہ آپریشن’’اسپرنگ شیلڈ‘‘ میں اب تک

شام کے 8 ہیلی کاپٹر اور 103 ٹینکوں سمیت اہم دفاعی تنصیبات کو تباہ کردیا گیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: ترکی کی پاکستانی منصوبے میں شمولیت،،،مخالفین کی نیندیں اُڑگئیں

واضح رہے کہ 27 فروری کو ادلب میں شامی فوج کے ترک فورسز پر
حملے میں 34 ترک فوجی جاں بحق ہوگئے تھے جس کے بعد
ترکی نے بدلہ لینے کا اعلان کیا تھا۔

یہ بھی پڑھیں: پاکستان ترکی کے ساتھ ہمیشہ بھائی کی طرح کھڑا ہوگا:آرمی چیف

یہ حملہ 2016 میں شام کے تنازعے میں اپنی افواج اتارنے کے بعد
سے ترک فوج کا سب سے بڑاجانی نقصان ہے۔

یہ بھی پڑھیں: ترک فوج مظلوم شامی شہریوں کی مدد کے لیے پہنچ گئی

یاد رہے کہ ادلب بشارالاسد حکومت کے مخالف شامی عسکریت پسند اپوزیشن اتحاد کا
آخری مضبوط گڑھ ہے، اس اتحاد کو امریکا، ترکی اور خلیجی ممالک کی مدد حاصل رہی ہے
جب کہ شامی افواج روس اور ایران کے ساتھ مل کر ادلب پر 8 سالہ قبضہ ختم کرنے
کے لیے اِن دنوں بھر پور کوششیں کررہی ہے۔

ادلب(مانیٹرنگ ڈیسک)

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.