Urdu News and Media Website

امن کےدشمنوں کا بزدلانہ وار۔بلوچستان کا دارالحکومت پھر لہو لہو

امن کےدشمنوں کا بزدلانہ وار۔بلوچستان کا دارالحکومت پھر لہو لہو۔

کوئٹہ کے علاقے شارع اقبال پر دھماکے میں 2پولیس اہلکاروں سمیت8افراد جاں بحق اور متعددزخمی ہوگئے۔

دھماکا ضلع کچہری کے قریب ہوا جہاں متعددسرکاری عمارتیں موجود ہیں

دھماکے کی اطلاع ملتے ہی سکیورٹی فورسز جائے وقوعہ پر پہنچ گئیں۔

ریسکیو ٹیموں نے لاشیں اور زخمیوں کو اسپتال منتقل کردیا۔

سکیورٹی فورسز نے علاقے کو گھیرےمیں لے کر تحقیقات شروع کردی ہیں۔

کوئٹہ:مسجدمیں دھماکا،ڈی ایس پی سمیت15افرادشہید

دھماکے کے زد میں کئی گاڑیاں اور راہگیر بھی آئے۔دھماکے کے بعد اسپتالوں میں ایمرجنسی نافذ کردی گئی۔

سول ہسپتال انتظامیہ کاکہناہے کہ زخمیوں کے لیے خون کی اشد ضرورت ہے۔

کوئٹہ دھماکہ‘ 2پولیس اہلکارو سمیت 29 فراد جاں بحق ‘40 سے زائد زخمی

وزیراعظم عمران خان نے دھماکے کی شدید مذمت کی ہے۔وزیراعظم نے قیمتی جانوں کے ضیاع پر گہرے دکھ اور افسوس کااظہار کیاہے۔

وزیراعظم نے زخمیوں کو بہترین طبی امدادی کی فراہمی کی بھی ہدایت کی۔

سیاسی اور مذہبی جماعتوں کے رہنماؤں نے افسوسناک سانحہ پر گہرے دکھ اور رنج کااظہار کیا ہے۔

سیاسی قیادت کاکہنا ہے کہ دہشتگر اپنی بزدلانہ کارروائیوں سے حوصلے پست نہیں کرسکتے۔

بڑی قربانیوں کے بعد حاصل ہونےوالے امن کو برقرار رکھنے کےلیے پوری قوم متحد ہے۔

امن کے دشمن کسی صورت اپنے مذموم مقاصد میں کامیاب نہیں ہوسکتے۔

پوری پاکستانی قوم سیسہ پلائی دیوار بن کر اپنی بہادر سکیورٹی فورسز کے شانہ بشانہ کھڑی ہے۔

کوئٹہ کی مسجد میں دھماکا، 5ا فراد شہید

امن کے دشمنوں نے گزشتہ ماہ 10 جنوری کو بھی کوئٹہ پر وارکیاتھا۔
سیٹلائٹ ٹاؤن کی مسجد میں ہونے والے دھماکے میں ڈی ایس پی امان اللہ سمیت 15 افراد شہید ہوگئے تھے۔
اس سے قبل 7 جنوری کو بھی کوئٹہ کے میکانگی روڈ پرایف سی کی گاڑی کے قریب دھماکے میں 2 افراد جاں بحق اور متعدد زخمی ہوگئے تھے۔

کوئٹہ(ویب ڈیسک)

تبصرے بند ہیں.