Urdu News and Media Website

تحفظ ختم نبوت اور قادیانیت کے متعلق قوانین ختم نہیں ہونے دیں گے۔عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت

لاہور( نیوز نامہ)عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت رابطہ کمیٹی اورعہدیداران کا اجلاس مرکزختم نبوت لاہور میںعالمی مجلس تحفظ ختم نبوت کے بزرگ رہنما شادی پورہ کے امیر قاری ظہورالحق کی صدارت میں منعقد ہوا۔اجلاس میں عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت کے مرکزی ناظم نشرواشاعت مولانا عزیزالرحمن ثانی ،پیر میا ںرضوان نفیس، مولانا قاری جمیل الرحمن اختر،مولاناسیدضیاء الحسن شاہ ،مولانا قاری علیم الدین شاکر،مبلغ ختم نبوت لاہور مولانا عبدالنعیم،مولانا خالد محمود،مولانا سعیدوقار نے شرکت کی۔مولانا عزیزالرحمن ثانی نے بیان کرتے ہوئے کہا کہ تحفظ ختم نبوت امت مسلمہ کا مشترکہ پلیٹ فارم ہے ،ختم نبوت اور قادیانیت کے متعلق قوانین ختم نہیں ہونے دیں گے۔عقیدہ ختم نبوت اور ناموس رسالت کی حفاظت کے لیے امت مسلمہ ہمیشہ حساس رہی ہے عقیدہ ختم نبوت کے تحفظ کے لیے بارہ سو صحابہ کرام نے جام شہادت نوش کیا ہے۔عقیدہ ختم نبوت پر پورے دین کی عمارت قائم ہے اور اسی میں امت مسلمہ کی وحدت کا راز مضمر ہے۔مولاناعبدالنعیم نے بیان کرتے ہوئے کہا کہ تحفظ ناموس رسالت قانون میں تبدیلی ہرگزبرداشت نہیں کریں گے انہوںنے کہاسلام کے نام پر بننے والے ملک میں ناموس رسالت ایکٹ کے خلاف ہر سازش کا مقابلہ کیا جائے گا ۔ناموس رسالت کا قانون تمام انبیاء کرام کی عزت اور ناموس کا دربان اور چوکیدار ہے ۔آئین کی دفعہ295-C تحفظ ناموس رسالت ایکٹ کیخلاف کوئی بات برداشت نہیں کریں گے ۔ ناموس رسالت قانون کیخلاف یہودی و قادیانی لابی سازشوں میں مصروف عمل ہے،ماضی میں بھی ایسی ناپاک کوشش کی گئی لیکن ان طاغوتی قوتوں کو خفت کا سامنا کرنا پڑا۔اسلامیان پاکستان ناموس رسالت ایکٹ کیخلاف کوئی بھی سازش ہر گز برداشت نہیں کرینگے۔مولانا خالدمحمود نے کہا کہ اسلام و ملک دشمن قوتوں اور انکے آلہ کاروں کو متنبہ کرتے ہیں کہ وہ آئین کی اسلامی دفعات اور تحفظ ناموس رسالت کے ایکٹ کیخلاف اپنی مہم جوئی بند کریں ۔علماء نے کہا کہ ہمیں اپنے اپنے شعبوں میں تحفظ ختم نبوت کے کام کو طلباء اور عوام الناس کو آگاہ کریں ۔اجلاس میں ضلعی کانفرنس،ختم نبوت انعام گھر،کورسزاورلاہورکے مختلف علاقوں میں تحفظ ختم نبوت کانفرنسیں منعقد کی جائیںگی۔اجلاس میں بتایا گیا کہ عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت کے مرکزی رہنما شاہین ختم نبوت مولانا اللہ وسایا 19نومبر سے 30نومبر تک لاہور کا تنظیمی و تبلیغی دورہ کرینگے ،اورتمام پروگراموں میں شرکت کرینگے،تمام پروگراموں کو حتمی شکل دے دی گئی ہے۔اجلاس میں ایک قرارداد میں مطالبہ کیا گیا کہ حکومت 7بی اور سی کے معاملے کو فی الفورحل کرے ،اورراجہ ظفرالحق کی سربراہی میں انکوائری کمیٹی کی رپورٹ کو عام کیا جائے اور اس رپورٹ میں جن ذمہ داران کا تعین کیا گیا ہے انہیں انصاف کے کٹہرے میں کھڑا کیا جائے اور انکو سزا دی جائے تاکہ آئندہ کو ئی بھی ایسی ناپاک حرکت نہ کرے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.