Urdu News and Media Website

شادی سے بھاگنے کا اشتہار ۔۔ وہ بھی سر بازار

تحریر: محمد عاصم حفیظ ۔۔۔
یہ لاہور کی ایک شاہراہ پر ٹیکسی سروس کا اشتہار ہے ۔ ایک دلہن کو اس انداز سے پیش کیا گیا ہے کہ وہ اپنی شادی سے بھاگ رہی ہے ۔ اشتہار تو لگ گیا ۔ ڈسکس بھی ہو جائے گا ۔ شہرت بھی مل جائے گی ۔ ایک سوچ پھیلا دی جائے گی ۔سوال صرف یہ ہے کہ کیا شہرت کی خاطر سب کچھ جس انداز میں چاہے پیش کرنے کی اجازت ہے ۔ اخلاقی دیوالیہ پن ۔ معاشرتی روایات کا مذاق اڑانا اور اب ایک مقدس رشتے کی یوں تضحیک ۔ جی ہاں ایک سبق دیا جا رہا ہے کہ "شادی سے بھاگیں” ۔ یعنی عین اس وقت جب سب اپنے آپکی خوشیوں میں شریک ہوں ۔ تو ایک ٹیکسی سروس آپ کو دلہن کے لباس میں بھاگنے کی سروس فراہم کر سکتی ہے ۔ جی ہاں یہی اشتہار ہے جو ارض پاک کی ایک شاہراہ پر دھڑلے سے لگایا گیا ہے ۔ کیا اس پر بھی کوئی نوٹس لیا جا سکتا ہے یا بس اسے بھی ایک نئی جدید روایت اور نیا فیشن سمجھ کر بس خاموشی اختیار کر لی جائے ۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.