Urdu News and Media Website

بھارت:ہسپتال میں سوئپر نے 11 سالہ لڑکی کو ریپ کا نشانہ بنا ڈالا

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک ) بھارت کے دارالحکومت نئی دہلی کے سرکاری ہسپتال میں سوئپر نے 11 سالہ زیر علاج لڑکی کا ریپ کردیا،متاثرہ لڑکی کی والدہ کی رپورٹ پر پولیس نے سوئپر کو ہسپتال سے گرفتار کرلیا۔ بھارتی میڈیا کے مطابق نئی دہلی کے سرکاری ہسپتال میں سوئپر نے 11 سالہ زیر علاج لڑکی کا ریپ کردیا۔ متاثرہ لڑکی کو ایک ہفتہ قبل ہسپتال میں داخل کیا گیا تھا اور وہ اس وقت سے یہاں زیر علاج تھی۔متاثرہ لڑکی کی والدہ نے واقع کی رپورٹ پولیس کو دی جس کے بعد پولیس نے سوئپر کو ہسپتال سے گرفتار کرلیا۔ڈی سی پی راجنیش گپٹ کے مطابق متاثرہ لڑکی کو 13 ستمبر کو ہسپتال میں علاج کے لیے لایا گیا تھا۔ملزم رادھے شیام نے پولیس کو بتایا کہ جس وقت لڑکی کی والدہ رات میں سوئی تو اس نے لڑکی کو اس کے بستر سے اٹھایا اور واش روم میں لے جا کر اس کا ریپ کیا۔پولیس نے کہا کہ رادہے شیام ہسپتال میں کنٹریکٹ پر ملازمت کررہا تھا جبکہ ملزم نے لڑکی کو ریپ کرنے کے بعد دھمکی دی تھی کہ وہ اس بارے میں کسی کو نہ بتائے ورنہ وہ اسے قتل کردے گا۔انہوں نے بتایا کہ لیکن لڑکی اپنے بستر پر واپس آئی اور اپنی والدہ کو ریپ کے حوالے سے آگاہ کیا۔پولیس نے بتایا کہ ملزم نے واقعہ کے بعد فرار ہونے کی کوشش کی لیکن متاثرہ لڑکی کی والدہ کے شور مچانے پر اسے پکڑ لیا گیا اور پولیس کے حوالے کردیا گیا۔پولیس نے مزید بتایا کہ لڑکی کا میڈیکل کیا گیا ہے جس میں ریپ کی تصدیق ہوگئی ہے، جس کے بعد پولیس نے ملزم کے خلاف ‘پی او سی ایس او ایکٹ کی دفعات کے تحت مقدمہ درج کرلیا۔اس سے قبل بھارت کی ریاست اتر پردیش کے ضلع گوندا کے ایک اسکول کے ٹوائلٹ سے 6 سالہ ریپ متاثرہ لڑکی کی لاش برآمد کی گئی تھی۔علاوہ ازیں اتر پردیش میں ہی پولیس نے 2 بچوں کے ساتھ ریپ کے الزام میں 55 سالہ شخص کو گرفتار کرلیا تھا۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.