Urdu News and Media Website

زندگی اوریجنل کے شوز دھوپ کی دیوار اور قاتل حسیناؤں کے نام نے پرومیکس انڈیا ایوارڈز میں گولڈ پرائز جیت لیا

لاہور(نیوزنامہ) 75ویں یومِ آزادی پر  سرحدوں کے پار فنکاروں کے اعتراف فن اور جشن کا اہتمام

زندگی اوریجنل کے شوز دھوپ کی دیوار اور قاتل حسیناؤں کے نام نے پرومیکس انڈیا ایوارڈز 2022میں گولڈ پرائز جیت لیا۔

زندگی نے سرحدپار شوز کے مواد اور فن کو نیاانداز دینے میں اہم کردار ادا کیا ہے۔ اس وقت، جب دونوں ممالک اپنی آزادی کی 75ویں سالگرہ منانے جارہے ہیں،زندگی کے مقبول شوز دھوپ کی دیوار اور قاتل حسیناؤں کے نام نے پرومیکس انڈیا ایوارڈز 2022کے تین ایوارڈز حاصل کرلئے ہیں۔

ہم زندگی کے اندازِنو کے دیسی شام کے شوقاتل حسیناؤں کے نام اور سرحد پار داستاں دھوپ کی دیوارکیلئے پورے خطے میں پرومیکس گولڈ کی شاندارجیت اور غیرمعمولی کامیابی کا جشن منارہے ہیں۔

نامور پاکستانی میوزک آرٹسٹ ذیشان پرویز کو قاتل حسیناؤں کے نام میں بہترین پروگرام ٹائٹل سیکوئنس کیلئے گولڈ ایوارڈدیا گیا جب کہ معروف ویژیول آرٹسٹ رہادا تاجور نے دھوپ کی دیوارکیلئے بہترین keyآرٹ کے لئے ایک اور گولڈ ایوارڈ جیتا

سرحد کے دونوں اطراف بسنے والے ڈیجیٹل ناظرین کے فیورٹ احد رضا میر اور سجل علی نے دھوپ کی دیوار میں بہترین سوشل میڈیا کمپین برائے پروگرام کا ایوارڈ حاصل کیا۔

زندگی کے مقبول اوریجنل رنگوں میں سجنے والے ایک اور رنگ قاتل حسیناؤں کے نام جرائم کے موضوع پر ایک اور دلکش سیریز ہے جس کے ہدایتکار مینو گور ہیں۔ ڈرامہ مختلف مظلوم خواتین کے گرد گھومتا ہے جو آدمیوں کو ان کی دھوکہ دہی، موقع پرستی اورتشددکی سزا دیتی ہیں۔

l

جیت کے بارے میں گفتگو کرتے ہوئے قاتل حسیناؤں کے نام سیریز کے میوزیشن ذیشان پرویز نے کہا،”مینوگور کی دیسی نوائر ویب سیریز کیلئے ٹائٹل سیکوئنس ترتیب دینا ایک خوشگوار تجربہ تھا اور میں ایوارڈکیلئے تمام جیوری ممبران کا شکریہ ادا کرتا ہوں۔

ذی زندگی کے ہر فرد اور اس پروڈکشن میں شامل پوری ٹیم ممبران کومیں مبارکباد پیش کرتا ہوں۔”

جیت ہی کے سلسلے میں بات کرتے ہوئے قاتل حسیناؤں کے نام سیریز کے ویژوئل آرٹسٹ رہادا تاجور نے کہا،”اس پروجیکٹ پر کام کرنے میں آزادی اور حوصلہ افزائی دونوں ہی عنصر شامل تھے۔ آزادی اس لحاظ سے کہ مجھے آئیڈیا سوچنے اور اس پر عمل کرنے دونوں میں مکمل آزادی تھی اور حوصلہ افزا اس لحاظ سے کہ پوری ٹیم کی انتہائی معاونت حاصل تھی اور پورے پروسیس میں مجھے سراہا جارہا تھا۔ آرٹ ورکس کے عالمی سطح پر تسلیم کئے جانے اور پھرایوارڈ جیتنے کے علاوہ، جو واقعی بے حد خوشی کا موقع تھا، جو اچھی بات سب سے نمایاں تھی وہ زندگی کی ٹیم کا انکسار تھا۔

میں نے دوستوں، فیملی اورر ساتھیوں کو کئی بار بتایا ہے کہ مجھے کبھی خود کو غیر جگہ پر محسوس نہیں ہونے دیا۔کس طرح ہر آئیڈئیے کی بڑی خوشی سے پذیرائی کی گئی اور کس طرح سرحدوں کے دونوں طرف اچھے تعلقات قائم کرنے میں مدد ملی اور یہ بات میرے لئے سب سے زیادہ اہم ہے۔ایوارڈ اس پر سرخا ب کے پر کی طرح ہے اور میں اتنا شکرگزار ہوں کہ مجھے اس پروجیکٹ پر کام کرنے کا موقع ملا جس کی مجھے دل سے خوشی ہے۔ جب ٹیم نے ایوارڈ جیتا اور مجھے ٹیم کی جانب سے فون کالز اور پیغامات موصول ہوئے، وہ ایسا لمحہ تھا کہ جب بھی مجھے خوش ہونے کا دل کرتا ہے تو میں اس کو ذہن میں باربار دہراتا ہوں۔ ”

قاتل حسیناؤں کے نام سیریز کے ڈائریکٹرمینوگور نے کہا،”قاتل حسیناؤں کے نام حقیقت میں پوری ٹیم کو دل سے پسند ہے اور ٹائٹل سیکوئنس کیلئے اس ایوارڈکا جیتنا ہمارے لئے انتہائی فخر اور شکرگزاری کی بات ہے۔”

پرومیکس انڈیا ایوارڈ میں زندگی کی کامیابی، مواد کیلئے خصوصی تلاش اور دونوں ملکوں کے درمیان ایک رابطہ قائم کرنے کا اہم قدم ہے۔

تبصرے