Urdu News and Media Website

کیپٹن ریٹائرڈ محمد صفدر کا افواجِ پاکستان میں قادیانیوں کی بھرتی پر پابندی کے لیے قرارداد لانے کا اعلان

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)سپریم کورٹ سے نااہل قرار دیے گئے سابق وزیراعظم میاں نواز شریف کے داماد اور رکن قومی اسمبلی کیپٹن ریٹائرڈ محمد صفدر نے افواجِ پاکستان میں قادیانیوں کی بھرتی پر پابندی کے لیے قرارداد لانے کا اعلان کیا ہے۔منگل کے روز قومی اسمبلی کے اجلاس میں اپنے خطاب میں انھوں نے کہا کہ پاکستان میں فوج سمیت کسی بھی محکمے میں اعلی عہدوں میں بیٹھے ہوئے قادیانی ملک کے لیے خطرہ ہیں اس لیے اُنھیں فوری طور پر عہدوں سے ہٹا دینا چاہیے۔کیپٹن ریٹائرڈ محمد صفدر نے جو مریم نواز کے شوہر ہیں،اپنے خطاب میں کہا کہ قادیانی ملک کے لیے زہر قاتل ہیں۔اُنھوں نے اسلام آباد کی قائداعظم یونیورسٹی میں نوبیل انعام یافتہ پاکستانی سائنسدان ڈاکٹر عبدالسلام سے منسوب فزکس ڈپارٹمنٹ کا نام بھی تبدیل کرنے کا مطالبہ کیا۔ اُنھوں نے کہا کہ ایسا نہ ہونے کی صورت میں وہ اس پر احتجاج کریں گے۔واضح رہے کہ قائد اعظم یونیورسٹی کے شعبۂ طبعیات کو قادیانی برادری سے تعلق رکھنے والے ڈاکٹر عبدالسلام سے منسوب کرنے کا حکم سابق وزیراعظم نواز شریف نے دیا تھا۔ حکومت کے اس اقدام پر پاکستان میں دینی جماعتوں نے احتجاج بھی کیا تھا۔اپنے خطاب میں کیپٹن(ر) صفدر نے عدلیہ میں بیٹھے لوگوں سے بھی ختم نبوت سرٹیفیکیٹ پر دستخط لینے کا مطالبہ کیا اور کہا کہ انصاف کی کرسی پر کسی بھی ایسے شخص کو نہیں بٹھانا چاہیے جس کا تعلق قادیانی برادری سے ہو۔پاکستانی آئین کے مطابق اعلی عدلیہ کے ججوں کے بارے میں پارلیمان میں بحث نہیں کی جا سکتی۔اُنھوں نے یہ بھی مطالبہ کیا کہ سیاسی جماعتیں بھی ٹکٹ دیتے ہوئے اپنے امیدواروں سے ختم نبوت کے سرٹیفکیٹ پر حلف لیں۔

تبصرے