Urdu News and Media Website

پاکستان میں استعماری ایجنڈا نہیں چلنے دیا جائے گا:عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت

لاہور( نیوزنامہ)پاکستان میں استعماری ایجنڈا نہیں چلنے دیں گے۔ حکومت قادیانیوں سے متعلق تمام شقوں کو سابقہ حالت میں بحال کرنے میں تاخیر نہ کرے۔ 7 بی اور سی سے متعلق ابہام دور کیا جائے۔ اتنے دن گزر جانے کے باوجود ختم نبوت حلف نامہ میں تبدیلی کی سازش کی تحقیقاتی رپورٹ سامنے نہ آنا باعث تشویش ہے۔ ختم نبوت کے معاملے کو سرد خانے میں ڈالنے کی کوشش کامیاب نہیں ہونے دیں گے۔ وزیر اعلی پنجاب صوبائی وزیر قانون کے توبہ نہ کرنے کا نوٹس لیں۔انہوں نے مزید کہا کہ جمہوریت کے علمبردار آئین میں موجود اسلامی شقوں پر عمل کا مطالبہ کیوں نہیں کرتے۔ اسلامی اقدار و روایات پر عمل ہی تمام مسائل کا حل ہے۔ شریعت سے پہلو تہی کی وجہ سے ملک بحرانوں کا شکار ہے۔ قانون ناموس رسالت کو دنیا کی کوئی طاقت تبدیل اور ختم نہیں کر سکتی ان خیالات کا اظہار عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت کے مرکزی ناظم نشرواشاعت مولانا عزیزالرحمن ثانی،قاری جمیل الرحمن اختر،مولانا عبداشکورحقانی،مولاناعلیم الدین شاکر، مولانا عبدالنعیم،مولانا مسعوداحمد،قاری محمداقبال نے ایک اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔علماء نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ ختم نبوت کانفرنس چناب نگر کی تمام قراردادوں پرعمل کرے اور حلف نامہ حذف کرنے والے سازشی عناصرجو کہ آئین کی اسلامی دفعات اور پاکستان کے خلاف سازشوں میں مصروف ہیں ان کوبے نقاب کرنا وقت کی اشد ضرورت ہے ،حکومت ختم نبوت کے عقیدے پر نقب لگانے والوں کے نام منظر عام پر لائے ،راجہ ظفر الحق کی سر براہی میں کمیٹی قوم کو اصل صورتحال سے آگاہ کرے اور سازشیوں کے چہرے عوام کے سامنے لائے۔علماء نے کہاکہ حکومت عقیدہ ختم نبوت کی شق میں تبدیلی کی ناپا ک جسارت کر نے والے سازشی عناصر کو بے نقاب کر کے عبرت کا نشان بنائے تاکہ آئندہ کسی کو عقیدہ ختم اور تحفظ ناموس رسالت قوانین کے ایکٹ پر شب خون مار نے کی جسارت نہ ہو۔ عقیدہ ختم نبوت کے تحفظ کے لیے کام کر نے والے ہی کل شفاعت رسولؐ کے حقدار بنیںگے۔علماء نے کہاکہ عقیدہ ختم نبوت اور آئین کی اسلامی دفعات کا تحفظ ہماری جدوجہد کا لازمی اور اہم حصہ ہے۔علماء نے مجلس تحفظ ختم نبوت کے قائدین ،مبلغین اور ملک بھر کے کارکنان کو بھی اس کامیاب کانفرنس کے منعقد کرنے پر مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ کانفرنس عقیدہ ختم نبوت کے تحفظ کے لیے سنگ میل ثابت ہوگی۔ہم اللہ سے امید کرتے ہیں کہ کانفرنس کے عالم اسلام پرباالعموم اور اہل پاکستان پر باالخصوص نہایت مثبت اثرات مرتب ہونگے اوریہ کانفرنس عقیدہ ختم نبوت اورقانون ناموس رسالت کے حوالے سے موجودہ تشویشناک صورتحال کے کاتمے کا سبب اور قادیانیوں کے لیے ہدایت کا ذریعہ بنے گی۔

تبصرے