Urdu News and Media Website

یو ای ٹی لاہور کا 29واں کانووکیشن، 2621 طلبا و طالبات میں ڈگریاں تقسیم 

لاہور(نیوزنامہ)یونیورسٹی آف انجینئرنگ اینڈ ٹیکنالوجی لاہور کا 29 واں کانووکیشن منعقد ہوا ، جس میں مرکزی اور ذیلی کیمپسزسمیت 2ہزار621 طلبہ و طالبات میں اسناد تقسیم کی گئیں ۔ کانووکیشن میں 21پی ایچ ڈی، 758ایم ایس، ایم فل اور1ہزار842بی ایس سی کی ڈگریاں دی گئیں۔ اس دوران شاندار کاکردگی دکھانے پر 38 طلباء میں 64 طلائی تمغے تقسیم کئے گئے۔کانووکیشن کی صدارت چانسلر یو ای ٹی و گورنر پنجاب انجینئر محمد بلیغ الرحمن نےکی۔تقریب کے دوران انٹر لوپ کے سی ای او مصدق ذوالقرنین کو اعزازی ڈگری سے بھی نوازہ گیا۔  وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر سید منصور سرور نے خطبہ استقبالیہ پیش کیا۔ اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے گورنر پنجاب و چانسلر یونیورسٹی انجینئر بلیغ الرحمان نے کامیاب طلبا وطالبات کو مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہا کہ  یو ای ٹی اور انجینئرنگ کا سفر ایک صدی پر محیط ہے ۔ یونیورسٹی کے انجینئرز ہی کی بدولت آج وطن عزیز تیزی سے ترقی کر رہا ہے ۔ انجینئر بلیغ الرحمان کا مزید کہنا تھا کہ یونیورسٹی موجودہ دور میں طلبا و طالبات  کے مستقبل کو سنوارنے میں بھرپور کردار ادا کر رہی ہے ۔ فیکلٹی ڈویلپمنٹ پروجیکٹس، ورکشاپس، STEM میں خواتین کو بااختیار بنانے کے اقدامات، پیٹنٹ، یو ای ٹی اکیڈمی کا قیام، نئے ڈگری پروگرام، 19 فنکشنل ریسرچ سینٹرز، طلباء کی سوسائٹیوں کے رضاکارانہ کام، شجرکاری مہم، سیمینارز اور بین الاقوامی کانفرنسیں طالب علموں کو ایک بہتر کل کے لیے تیار کرنے کے لیے یو ای ٹی کے غیر متزلزل عزم کی عکاسی کرتی ہیں۔وائس چانسلر ڈاکٹر منصور سرور نے یونیورسٹی کی اچیومنٹ پر روشنی ڈالی ۔ ڈاکٹر منصور سرور کے مطابق یونیورسٹی کے اساتذہ اور طلبا نصابی اور ہم نصابی سرگرمیوں میں شاندار کارنامے سرانجام دے رہے ہیں ، 35 یونیورسٹیز کے 173 پراجیکٹس میں یو ای ٹی کے سٹوڈنٹس نے انجینئرنگ کے پانچ میں سے چار میدانوں میں  پہلی پوزیشن حاصل کی ، رواں برس یونیورسٹی کے 58 اساتذہ نے 224 ملین کی ریسرچ گرانٹس حاصل کیں جبکہ 2019 سے اب تک یونیورسٹی کے 113 اساتذہ 650 ملین کی گرانٹس حاصل کرچکے ہیں۔وائس چانسلر کا مزید کہنا تھا کہ یونیورسٹی کی عالمی درجہ بندی میں 2023 کیلئے یو ای ٹی نے 18 درجے ترقی کی اور یونیورسٹی عالمی درجہ بندی میں 183میں 165ویں نمبر پر آگئی  ہے۔۔انہوں نے یونیورسٹی کے سابق انجینئرز کے کردار اور خدمات پر روشنی ڈالتے ہوئے فارغ التحصیل طلبا کو اپنے سابقین کا مشن جاری رکھنے کا مشورہ دیا۔ انہوں نے گریجویٹس کو مشورہ دیا کہ وہ اپنی پسند کے کیریئر کا انتخاب کریں اور پاکستان اور ساتھی انسانوں کی بہتری کے لیے سخت محنت کریں۔ آخر میں انہوں نے تمام شعبہ جات کے لیے بہترین اساتذہ کا نام لے کر ان کی خدمات کا اعتراف کیا۔کانووکیشن کے موقع پر طلباء پرجوش نظر آئے۔ طلباء نے کانووکیشن کی ٹوپیاں ہوا میں اچھال کر خوشی کا اظہار کیا۔

تبصرے