Urdu News and Media Website

ہجوم کو قوم بنانے کیلئے قومی حکومت ناگزیر ہے،محمدناصراقبال خان

لاہور(نیوزنامہ) ہیومن رائٹس موومنٹ انٹرنیشنل کے مرکزی صدرمحمدناصراقبال خان،چیف آرگنائزر میاں محمدسعید کھوکھرایڈووکیٹ، سیکرٹری جنرل محمدرضاایڈووکیٹ ،سینئر نائب صدورتنویرخان، محمداشرف عاصمی ایڈووکیٹ، ندیم اشرف ،چودھری ثاقب ظہیر ،سلمان پرویز،روحی کھوکھر ایڈووکیٹ ،مرکزی نائب صدور ناصرچوہان ایڈووکیٹ، ممتازاعوان ،محمدشاہدمحمود ،صدر پنجاب محمدیونس ملک،نائب صدرشبیرحسین ،صدرنیویارک محمد جمیل گوندل، صدر مدینہ منورہ سرفرازخان نیازی،صدرکراچی یونس میمن ،صدر چنیوٹ راناشہزادٹیپو ،صدرفیصل آبادندیم مصطفی اور صدر قصور میاں اویس علی نے کہا ہے کہ ریاستی نظام کودرست کرنے اور ہجوم کو قوم بنانے کیلئے قومی حکومت ناگزیر ہے۔نام نہادجمہوریت نے ہماری ریاست کومنفی سیاست،تعصبات ،بدعنوانی اوربدانتظامی کے سواکچھ نہیں دیا۔زیادہ ترسیاستدانوں نے عوام میں نفاق اورتعصبات کابیج بویا وہ انہیں متحد نہیں کرسکتے۔قومی حکومت کے قیام سے بدعنوانی اوربدانتظامی سمیت کئی بحران دم توڑدیں گے۔ کسی جانبدار اورمتنازعہ کردار کوقومی حکومت میںہرگزنمائندگی نہ دی جائے،کئی دہائیوں سے اقتدارمیں شریک چند خاندان دونوں ہاتھوںسے پاکستانیوں کی محنت کاپیسہ سمیٹ رہے ہیں ۔وہ ایک اجلاس سے خطاب کررہے تھے ۔محمدناصراقبال خان اور میاں محمدسعید کھوکھرایڈووکیٹ نے مزید کہا کہ اگرقومی حکومت بنے توان خاندانوں کی بیرون ملک پڑی دولت کی وطن واپسی یقینی بنا ئے۔جہاں احتساب نہیں ہوتاوہاں پھر خونی انقلاب آ تے ہیں۔انہوں نے کہا کہ بدعنوان عناصرقومی مجرم ہیں اوران میں سے کوئی رحم کامستحق نہیں ہے ۔ بے رحم احتساب کے پل صراط سے گزرجانیوالے ضرور انتخاب میں شریک ہوں ،بدعنوان عناصر کومقدس ایوانوں میں ہرگز نہ جانے دیاجائے۔انہوں نے کہا کہ عوام امیدواروں کاپارٹی جھنڈا نہیں بلکہ ان کے ایجنڈا کودیکھتے ہوئے انہیں ووٹ دیں۔ انہوں نے کہا کہ جمہوریت پاکستان میں جمہور نہیں صرف اشرافیہ کوراس آئی۔سرمایہ دار سیاستدان جمہوریت کے ثمرات عام آدمی تک پہنچانے کیلئے تیار نہیں ۔انہوں نے کہا کہ قیام پاکستان سے اب تک سات دہائیوں میں کئی بار انتخاب ہوا مگرایک منظم سازش کے تحت احتساب نہیں ہونے دیاگیا ۔پاکستان کے دوام اورسیاسی ومعاشی استحکام کیلئے دوبارہ صدارتی نظام آزمانے کاوقت آگیا ۔انہوں نے کہا کہ بابائے قوم محمدعلی جناح ؒ نے بھی مادروطن کیلئے صدارتی طرز حکومت کوپسند کیا تھا۔

تبصرے