Urdu News and Media Website

پولینڈ کی فٹبال ٹیم ورلڈکپ میں شمولیت کیلئےلڑاکاطیاروں کے حفاظتی حصار میں کیوں روانہ ہوئی

قطر میں کھیلے جانے والے فٹ بال ورلڈ کپ میں شمولیت کے لیے جب پولینڈ کی ٹیم ملک سے روانہ ہوئی تو ایک حیران کن منظر دیکھا گیا۔
قطر کے لیے سفر کرنے والی پولینڈ کی قومی فٹ بال ٹیم کے جہاز کے ساتھ ساتھ ہوا میں دو ایف سولہ لڑاکا طیارے بھی موجود تھے۔
پولینڈ کی فٹبال ٹیم کے آفیشل ٹویٹر اکاؤنٹ نے ایک ویڈیو پوسٹ کی جس میں ایف سولہ طیاروں کی جوڑی کو ٹیم کے جہاز کے ساتھ اڑتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے۔
پولینڈ کی فٹبال ٹیم کےآفیشل ٹویٹر اکاؤنٹ کی ٹویٹ میں بتایا گیا کہ ایف سولہ طیاروں کے ہمراہ پولینڈ کی جنوبی سرحد پر لے جایا گیا۔
اس ٹویٹ کے ساتھ ایک ویڈیو بھی پوسٹ کی گئی اور آخر میں ’آپ کا شکریہ اور پائلٹوں کو سلام!‘ بھی لکھا دیکھا جاسکتا ہے۔
ٹیم کی طرف سے لی گئی تصاویر میں ایف سولہ کےپائلٹوں میں سے ایک کو اپنے کاک پٹ کی کھڑکی میں قومی سکواڈ کے نام کا نشان رکھے ہوئے دکھایا گیا۔
یاد رہے کہ روس اور یوکرین کے درمیان جنگ کے دوران چند روز قبل ایک میزائل گرنے سے پولینڈ میں دو افراد ہلاک ہوگئے تھے۔
اس واقعے کے بعد سے پولینڈ کی فوج کو ہائی الرٹ پر رکھا گیا ہے

پولینڈ کے مقامی میڈیا میں فٹبال ٹیم کے ہمراہ لڑاکا طیاروں کی روانگی کو بھی اسی تناظر میں دیکھا جا رہا ہے۔
پولش ٹیم اپنا پہلا میچ میکسیکو کی ٹیم کے خلاف 22 نومبر کو کھیلے گی

چار وزبعد ان کا مقابلہ سعودی عرب سے ہو گا۔
پولینڈ کا گروپ سی ہے اور اس میں ارجنٹائن، سعودی عرب اور میکسیکو شامل ہیں۔
پولینڈ کے گروپ مرحلے کا آخری میچ 30 نومبر کو ہو گا

جہاں ان کا مقابلہ لیونل میسی کےارجنٹائن سے ہو گا۔
بارسیلونا کے سٹار سٹرائیکر رابرٹ لیوینڈوسکی اور ان کا عملہ 1986 کے بعد پہلی بار پولینڈ کو ناک آؤٹ مرحلے تک لے جانے کی کوشش کرے گا۔

تبصرے