Urdu News and Media Website

ٹک ٹاک ایپلی کیشن پر اب پولیس بھی ہوگی،نوجوان ہوشیار ہوجائیں

معروف سوشل میڈیا ایپلی کیشن ٹک ٹاک کی مقبولیت اب سرکاری اداروں تک بھی پہنچ چکی ہے۔اب نوجوانوں کے ساتھ تعلق بنانے کیلئے پولیس بھی اس ایپلی کیشن ٹک ٹاک کا استعمال کر ے گی۔

جی ہاں ٹک ٹاک نوجوانوں کی پسندیدہ ایپ سمجھی جاتی ہے اور نوجوانوں کی بڑی تعداد اس ایپ کو استعمال کرتی ہے۔

ٹک ٹاک کی مقبولیت کو مدِنظر رکھتے ہوئے بھارتی ریاست بنگلور کی سٹی پولیس نے بھی ٹک ٹاک پر اکاؤنٹ بنالیا ہے تاکہ وہ اس پلیٹ فارم کے ذریعے نوجوانوں سے جُڑ سکیں اور ساتھ ہی انہیں آگاہی بھی فراہم کرسکیں۔

جنوب مشرقی بنگلور پولیس کے حکام کا اس حوالے سے کہنا تھا کہ ’ہم بھی اب ٹک ٹاک پر ہیں جو کہ ایک مقبول ترین پلیٹ فارم ہے اور یہ نوجوانوں سے جُڑنے کے لیے کافی اچھا ہوگا‘۔

حکام نے کہا کہ اس اپیلی کیشن کے مواد کو مدِ نظر رکھتے ہوئے ہم اس پر آگاہی سے متعلق ویڈیوز اپ لوڈ کریں گے جس میں ہنسی مذاق کا عنصر بھی شامل ہوگا۔

بنگلور پولیس کی جانب سے ایپلی کیشن پر آگاہی سے متعلق ویڈیوز بھی اپ لوڈ کی گئی ہیں اور ان کے فالوورز کی تعداد 25 ہزار تک پہنچ گئی ہے۔

یہ بھی پرھیں:

حریم شاہ کی نئی ویڈیو وائرل،ساری کہانی منظر عام پر

واضح رہے کہ اس سوشل میڈیا ایپ کو 2019 میں اُس وقت مقبولیت حاصل ہوئی جب ماہِ نومبر میں ایپلیکیشن کو پلے اسٹور اور ایپل اسٹور دونوں سے ہی ایک ارب 50 کروڑ صارفین نے ڈاؤن لوڈ کیا اور اس ایپ نے معروف ترین سوشل میڈیا پلیٹ فارم فیس بک میسنجر کو بھی پیچھے چھوڑ دیا۔

یہ بھی پرھیں:

محبت سے انکارکرنے کی سزا موت

2019 میں ٹک ٹاک کو دنیا بھر میں سب سے زیادہ بھارت میں ڈاؤن لوڈ کیا گیا۔

یہ بھی پرھیں:

شادی ٹوٹنے کی ایسی وجہ؟ جان کر حیران رہ جائیں گے

یہ بات بھی سامنے رہے کہ یہ ٹک ٹاک کئی لوگوں کی جان بھی لے چکی ہے،کئی نوجوان ویڈیوز بناتے ہوئے حادثات کا شکار ہو چکےہیں۔بھارت میں اس ایپلی کیشن پر پابندی کا معاملہ بھی سپریم کورٹ میں رہ چکا ہے۔
بنگلور(ویب ڈیسک)

یہ بھی پرھیں:

گوگل اور یوٹیوب کتنا کماتے ہیں؟تفصیلات سامنے آگئیں

تبصرے