Urdu News and Media Website

ٹرمپ کی خارجہ پالیسی سے امریکا تنہا ہو جائے گا،ڈیموکریٹک سینٹرز

واشنگٹن(نیوزنامہ) امریکا کے ایوان بالا میں اپوزیشن جماعت ڈیموکریٹس نے 45 ویں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی خارجہ پالیسیوں کو ‘خطرناک، لاپرواہ اور امریکا مخالف قرار دے دیا۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق تیار کردہ دستاویزات سے متعلق سینیٹر بین گارڈین نے کہا کہ ڈونلڈ ٹرمپ سوشل میڈیا ٹوئٹر کے ذریعے خارجہ پالیسی کا اعلان کررہے ہیں جبکہ ٹرمپ کے خارجہ پالیسی سے متعلق فیصلے جلد بازی پر مبنی ہوتے ہیں اور بیشتر فیصلوں میں ان کے اپنے سیکریٹری آف اسٹیٹ ریکس ٹلرسن کی مشاورت بھی شامل نہیں ہوتی۔سینیٹر بین گارڈین نے ڈونلڈ ٹرمپ کو قومی سلامتی کے لیے خطرہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ ‘ہماری قوم اور آزاد دنیا کی تاریخ میں ٹرمپ ایک غیر متوقع حکمران ہیں،دستاویزات میں صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو خبردار کیا گیا کہ اہم نوعیت کے سفارتی امور کو ٹوئٹر پر طے نہیں کیا جا سکتا۔ڈیموکریٹس کی جانب سے تیار کردہ دستاویزات میں کہا گیا کہ ‘ٹرمپ انتظامیہ ہر مسئلے، حالات اور واقعات پر ہتھوڑے برسانا شروع کردیتی ہے’ اور اعتراضات کی بازگشت اسلام آباد میں بھی سنی جارہی ہیں۔کمیٹی کے ڈیموکریٹ اسٹاف نے دعویٰ کیا کہ سیکریٹری آف اسٹیٹ ٹلرسن نے خود اقرار کیا ہے کہ انہیں امریکا کی خارجہ پالیسی سے متعلق فیصلوں کے بارے اس وقت معلوم ہوتا ہے جب صدر کا سوشل میڈیا اسٹاف ان کے کہنے پر ٹوئٹ کرتا ہے۔امریکا میں مسلم ممالک پر سفری پابندیوں سے متعلق ٹرمپ کے فیصلے پر اسٹاف نے لکھا کہ ‘مسلم ممالک پر سفری پابندیوں کا فیصلہ بطور ثبوت پیش کیا جا سکتا ہے کہ ٹرمپ انتظامیہ ہمیں دنیا سے کاٹ کر ہماری اقدار کی توہین کررہی ہے۔

تبصرے