Urdu News and Media Website

نور مقدم پہلی منزل سے گرکر دروازے کی طرف دوڑی، نئے انکشافات سامنے آگئے

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)وفاقی دارالحکومت میں وحشیانہ طریقے سےسابق سفیر کی بیٹی کے قتل سے متعلق فوٹیج میں مزید تفصیلات سامنے آگئیں۔

نجی ٹی وی چینل جیونیوز کی رپورٹ کے مطابق سفاکی سے قتل کی گئی نور مقدم پہلی منزل سے نیچے گرتے ہی دروازے کی طرف دوڑی
لیکن ملزم ظاہرجعفر اسے گھسیٹتے ہوئے اندر لے گیا اور دروازہ بند کردیا۔

 

اس واقعے سے متعلق سامنے آنے والی ویڈیو میں گارڈ بھی نظرآرہا ہے لیکن اس نے ملزم کو روکنے کی کوشش نہیں کی۔
ویڈیوکے مطابق بحالی مرکز کی ٹیم کافی دیربعد ملزم کے گھر پہنچی اور ٹیم کے آنے سے قبل ہی ملزم نور مقدم کو قتل کرچکا تھا۔

 

دوسری جانب پولیس نے ملزم ظاہر جعفر کا موبائل فون برآمد کرلیا جسے فوری فرانزک کے لیے بھجوادیا گیا ۔
تفتیش کے مطابق ملزم نے نور مقدم کو پہلے سے طے شدہ پلان کے مطابق قتل کیا ۔
ملزم نے اپنے دوستوں سے کہا تھا کہ وہ امریکی شہری ہے کسی کو قتل بھی کردے تو اسے پکڑا نہیں جاسکے گا۔

 

جیو نیوز کی رپورٹ کے مطابق ذرائع کا کہناہے کہ ملزم ظاہر جعفر انٹرنیشنل کالج کنسلٹنٹ نامی فرم کا مالک تھا

اور طلبہ کو بیرون ملک اسٹڈیز کے لیے معاونت فراہم کرتا تھا

 

ملزم ظاہر جعفر کو یہ کمپنی اس کے والد ذاکر جعفر نے بنا کر دی تھی

اور اس کی کمپنی کا انٹرنیشنل بزنس اسکول آف ہنگری کے ساتھ معاہدہ تھا۔

 

ملزم ظاہر جعفر طلبہ کو ہنگری تعلیم کے لیے بھجواتا تھا

ملزم 2017 سے اس کمپنی کو چلا رہا تھا اور وہ دیگر ممالک میں بھی طلبہ کو معاونت فراہم کرتا رہا ہے۔

 

ذرائع کے مطابق ملزم ظاہر جعفر کا دفتر واقعے کے مقام یعنی رہائش گاہ سے 20 منٹ دوری پر واقع تھا

ملزم اپنے خاندانی بزنس جعفر اینڈ کو کا ڈائریکٹر بھی ہے۔

تبصرے