Urdu News and Media Website

نواز شریف پر ایک اور فردِجرم عائد

اسلام آباد کی احتساب عدالت نے سابق وزیراعظم پر فلیگ شپ انویسٹمنٹ ریفرنس کی فردِ جرم عائد کردی ہے رہفرنس  قومی احتساب بیورو (نیب) کی جانب سے دائر  کیا گیا تھا ان کے دونوں صاحبزادوں حسن نواز اور حسین نواز  کو مفرور ملزمان قرار دے دیا ہے۔نواز شریف کی کی غیر موجودگی میں ان کے نمائندے کو فردِ جرم پڑھ کر سنائی گئی جب کہ ظافر خان نے نواز شریف کی جانب سے صحتِ جر  سے انکار کیا۔فردِ جرم کے مطابق نواز شریف نے جوائنٹ انویسٹی گیشن ٹیم کو بتایا تھا کہ وہ 15 کمپنیوں کے شیئر ہولڈر تھے جن میں فلیگ شپ انویسٹمنٹ، ہارٹ اسٹون پراپرٹیز، کیو ہولڈنگ، کوئنٹ ایٹون پلیس ٹو، کوئنٹ سالوانے، کوئنٹ، فلیگ شپ سکیورٹیز، کوئنٹ گلوسیسٹر پلیس، کوئنٹ پیڈنگٹن، فلیگ شپ ڈویلپمنٹس، الانا سروسز (بی وی آئی)، لنکن ایس اے (بی وی آئی)، چیڈرون، انسبیچر، کومبر اور کیپٹل ایف زیڈ ای دبئی شامل ہیں۔نواز شریف کے نمائندے نے صحتِ جرم سے انکار کیا جس کے بعد احتساب عدالت نے سابق وزیرِاعظم پر فلیگ شپ انویسٹمنٹ ریفرنس میں بھی فردِ جرم عائد کردی جب کہ ان کے دونوں صاحبزادوں حسن نواز اور حسین نواز کو مفرور ملزمان قرار دے دیا۔عدالت نے فلیگ شپ ریفرنس میں استغاثہ کے گواہ، کمشنر ان لینڈ ریونیو لاہور جہانگیر خان کو طلبی کا سمن جاری کرتے ہوئے سماعت 26 اکتوبر۔تک ملتوی کردی ہے۔

تبصرے