Urdu News and Media Website

قادیانی اسلام و پاکستان دشمن قوتوں کے ایجنٹ ہیں: عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت

لاہور ( نیوزنامہ) عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت کے زیراہتمام تحفظ ختم نبوت کانفرنس اچھرہ لاہورمیں مجلس تحفظ ختم نبوت لاہور کے نائب امیر پیرمیاں محمدرضوان نفیس کی صدارت میں منعقد ہوئی ۔کانفرنس میں مجلس تحفظ ختم نبوت کے مرکزی ناظم تبلیغ مولانا محمداسماعیل شجاع آبادی،مولانا عزیزلرحمن ثانی،ضلع لاہور کے سیکرٹری جنرل مولاناقاری علیم الدین شاکر،مبلغ ختم نبوت لاہورمولانا عبدالنعیم مولانا قاری عبدالعزیز،مولانا ذکی اللہ کیفی،حافظ محمدعمران نقشبندی ودیگر علماء اور اہل علاقہ نے شرکت کی۔کانفرنس سے خطاب کرتے مولانا محمداسماعیل شجاع آبادی نے کہا کہ حکمران غیر ملکی آقاؤں کو خوش کرنے کے لئے قادیانیت نوازی کا مظاہرہ کر رہے ہیں۔ اہلیان پاکستان ختم نبوت ،ناموس رسالت کا تحفظ اور قادیانیت کا ہرمقام پر آئینی اور قانونی طورپرمحاسبہ کرتے رہینگے۔ قادیانی اسلام اور پاکستان کے کھلے دشمن ہیں۔ قادیانی قرآن و سنت، اجماع امت اور 73 کے آئین کی رو سے دائرہ اسلام سے خارج ہیں۔ اس لئے قادیانیوں کو مسلمان سمجھنے والا اسلام اور آئین کا غدار ہے ۔ ختم نبوت حلف نامہ میں رد و بدل کا ذمہ دارکو بے نقاب کیا جائے راجہ ظفرالحق کی رپورٹ کو منظر عام پر لایا جائے ۔مولانا عزیزالرحمن ثانی نے کہا کہ عقیدہ ختم نبوت ایمان کی بنیاد ہے۔ قادیانیت انگریز کا لگایا ہوا پودا ہے۔ حکومت کی قادیانیت نوازی ناقابل برداشت ہے۔ اہل حق منکرین ختم نبوت کا تعاقب کرتے رہیں گے۔ مولاناقاری علیم الدین شاکرنے کہا کہ قادیانی اسلام و پاکستان دشمن قوتوں کے ایجنٹ ہیں۔ مسلمان ختم نبوت اور ناموس رسالت کی پاسبانی کے لئے کسی قربانی سے دریغ نہیں کریں گے۔ مولانا عبدالنعیم نے کہا کہ دنیا کی کوئی طاقت قانون ناموس رسالت کو ختم نہیں کر سکتی۔ قادیانی لابی کی اسلام دشمن سازشیں کامیاب نہیں ہونے دیں گے۔ حکومت قادیانیوں کو شعائر اسلام استعمال کرنے سے روکے اور امتناع قادیانیت آرڈیننس پر عملدرآمد یقینی بنایا جائے۔ تحفظ ختم نبوت کے لئے جدوجہد کرنا ایمان کا تقاضا ہے۔ مولانا قاری عبدالعزیزنے کہا کہ عدالتوں سے سزا یافتہ گستاخان رسول کو پھانسیاں دی جائیں۔ حکومتی صفوں اور سرکاری اداروں کو قادیانیت نواز عناصر سے پاک کیا جائے۔ قادیانیوں کو آئین و قانون کا پابند بنایا جائے۔ قادیانیوں کی اسلام و پاکستان دشمن سرگرمیوں کو روکا جائے۔ عقیدہ ختم نبوت کا تحفظ امت کا اجتماعی فریضہ ہے۔ کانفرنس میں تمام حاضرین و سامعین سے وعدہ لیا گیا کہ وہ 10 مارچ کو بادشاہی مسجد ختم نبوت کانفرنس کی بھرپور انداز میں تیاری کریں اوراسکی دعوتی مہم چلائیں۔

تبصرے