Urdu News and Media Website

قادیانیوں کو اسلام کا نام استعمال کرنے کی اجازت نہیں دی جاسکتی،علما کرام

لاہور(نیوز نامہ )عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت لاہور کے زیراہتما م منعقد ہونیوالی تاریخ ساز ختم نبوت کانفرنس بادشاہی مسجد لاہور کی تیاری کے سلسلے میں گلشن راوی،کوٹ لکھپت اور ٹاؤن شپ میں ختم نبوت کنونشن منعقد کیے گئے ۔کنونشن میں شاہین ختم نبوت مولانا اللہ وسایا،شیخ الحدیث مولانا عبدالقیوم نیازی، پیرمیاں محمدرضوان نفیس،مولانا عزیزالرحمن ثانی، جنرل سیکرٹری لاہور مولانا قاری علیم الدین شاکر،قاری جمیل الرحمن اختر،مولانا عبدالشکورحقانی،مبلغ ختم نبوت لاہور مولانا عبدالنعیم،مولانا خالدمحمود،مولانا عبدالخالق نیازی،مولانا مسعوداحمددینپوری،مولاناسعید وقارمولانا عزیزالرحمن ،مولانا محمدامین،مولانا کاشف بلال سمیت علماء نے شرکت کی۔مولانا اللہ وسایانے کہاکہ اسلام کے بنیادی عقائد ہیں جن کومانے بغیر کوئی شخص مسلمان نہیں ہوسکتا۔ ان بنیادی عقائد میں ختم نبوت کا عقیدہ اساسی حیثیت رکھتا ہے، جس پر ہر مسلمان کا ایمان ہونا ضروری ہے۔آئین پاکستان یہ کہتا ہے کہ قادیانیوں کا مسلمانوں سے کوئی تعلق نہیں اور نہ ان کا مذہب اسلام ہے، اس لئے قادیانیوں کو اسلام کا نام استعمال کرنے کی اجازت نہیں دی جاسکتی۔انہوں نے کہا کہ حالیہ دور میںعقیدہ ختم نبوت کے خلاف یہ سازش معمولی نہیں ہے اس سازش کے تمام کرداروں کو سزانہ ملی تودشمن مزید سازشیں کرینگے انہی تمام سازشوں کوبے نقاب کرنے کے لیے مجلس تحفظ ختم نبوت نے آل پنجاب ختم نبوت کانفرنس 10مارچ کو بادشاہی مسجد میں منعقدکرنیکا اعلان کیا ہے اس کانفرنس میں تمام مکاتب فکرکی نمائندگی ہوگی۔علماء اس عزم کا اظہار کیا کہ پنجاب بھر میں ختم نبوت کانفرنس کی تیاری بھرپور اندازمیں کی جائیگی اور عاشقان رسول وفود اور قافلوں کی شکل میں شرکت کرینگے۔

تبصرے