Urdu News and Media Website

غازی ملت سردار ابراہیم نےقوم اور وطن کے لیے لازوال قربانیاں پیش کیں:مقررین

لاہور(نیوزنامہ)غازی ملت سردار محمد ابراہیم خان ایک بااصول سیاست دان اور باکردارانسان تھے۔ انھوںنے اپنی قوم اور وطن کے لیے لازوال قربانیاں پیش کیں۔ وہ ساری زندگی مقبوضہ جموں وکشمیر کی بھارت سے آزادی کے لیے سرگرم عمل رہے۔ ان خیالات کا اظہار جموں وکشمیرلبریشن سیل کشمیر سنٹر لاہور کے زیراہتمام بانی صدر آزادریاست جموں وکشمیر غازی ٔملت سردار محمد ابراہیم خان کی 18ویں برسی کے موقع پر منعقدہ خصوصی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے مقررین نے کیا۔

تقریب سے رہنما کل جماعتی حریت کانفرنس انجینئرمشتاق محمود، انچارج ریسرچ ونگ کشمیرسنٹر لاہو رسردار ساجد محمود، سابق سیکرٹری جنرل جمعیت علماء پاکستان آغا رب نواز درانی، قاری محمد مشتاق، جنرل سیکرٹری پراپرٹی ایسوسی ایشن لاہور ماجد خان، انعام الحسن اور راجہ ندیم سرور نے بھی خطاب کیا۔

سردارساجد محمود نے کہا کہ غازی ملت سردارمحمدابراہیم خان کی سربراہی میں مجاہدین نے ڈوگرہ فوج کے خلاف جدوجہد کرتے ہوئے آزادکشمیر کا موجودہ علاقہ آزاد کروایا۔ ان کی شاندار خدمات کے اعتراف میں انھیں ریاست جموں وکشمیر کا پہلا صدر بننے کا اعزاز حاصل ہوا۔

سردار محمدابراہیم خان کو یہ اعزاز حاصل ہے کہ قراردادالحاق پاکستان بھی سرینگر میں واقع ان کی رہائش گاہ پر منظورکی گئی۔
سردار محمدابرہیم خان نے لنکن ان یونیورسٹی برطانیہ سے قانون کی ڈگری حاصل کی ۔ تحریک آزادی سے قبل وہ کشمیر اسمبلی کے رکن بھی رہے۔
انھیں متعدد ادوار میں آزادکشمیر کا صدر بننے کا اعزاز بھی حاصل ہوا۔

انجینئر مشتاق محمود نے کہا کہ سردارمحمدابراہیم خان جیسے لوگ نہ صرف اپنی زندگی میں بھرپور عزت پاتے ہیں بلکہ ان کے دنیا سے جانے کے بعدبھی لوگ انھیں بھرپور خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے ان کی خدمات کے تذکرہ سے نئی نسلوں کو آگہی فراہم کرتے ہیں۔

سردارمحمدابراہیم خان جیسے بااصول اور باکردار سیاست دان کی زندگی ہمارے لیے مشعل راہ ہے۔
سردارصاحب کے نقش قدم پر چلتے ہوئے ہم پورے کشمیر کی آزادی اور پاکستان سے الحاق کی جدوجہد میں کامیاب ہوسکتے ہیں۔

انھوںنے مزید کہا کہ سردارمحمدابراہیم خان کی شاندار خدمات سے نوجوان نسلوں کو آگہی فراہم کرنا ضروری ہے
تاکہ انھیں معلوم ہو کہ ہمارے بزرگوں نے آزادی کے حصول کے لیے کس قدر قربانیاں دیں اور اب ہمارا یہ فرض ہے کہ ہم ان کے نقش قدم پر چلتے ہوئے آزادی کے اس مشن کو پایہ تکمیل تک پہنچائیں۔

تبصرے