Urdu News and Media Website

حکومت وکلا کو سکیورٹی نہیں دے سکتی تو عدالتیں بند کروا دیں گے:رانا انتظار،مدثر چودھری و دیگر کا پرویز اختر ایڈووکیٹ کے قتل پر شدید ردعمل

لاہور(نیوزنامہ) فیروز ولا میں دن دیہاڑے پرویز اختر چیمہ ایڈووکیٹ کے قتل پر وکلاء میں شدید غم وغصہ کی لہر ۔
پورے پاکستان کے وکلاء سراپا احتجاج بن گئے اور قتل کی شدید مذمت کی ۔ ممبر پنجاب بار کونسل رانا انتظار حسین، صدر ہیومن رائٹ سیل پنجاب محمدمدثر چوہدری ایڈووکیٹ کا کہنا تھا کہ اگر حکومت وکلا کو سکیورٹی نہیں دے سکتی تو عدالتیں بند کروا دیں گے،غلام مجتبی چودھری ایڈووکیٹ کا کہنا تھا کہ ملزمان کو 24گھنٹے کے اندر گرفتار کر کے عبرت ناک سزا دی جائے ۔جس ملک میں معزز پیشہ کے لوگ بھی محفوظ نہیں تو اس ملک کے باقی کو گوں کے اللہ ہی حافظ ہے پورے پاکستان کی سیکورٹی کو حکمرانوں کے حفاظت پر لگا دیا گیا ۔ مرزاحسیب اسامہ، عمران جاوید، شاہد نعیم رحمان ناصر رانا، رانا نعمان، ایڈووکیٹ ودیگر نے رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ عدالتوں کی عزت کرنا بھی ہمارا فرض ہے ہر روز وکلاء کا قتل سکیورٹی اداروں کے منہ پر طماچہ ہے ہم حکومت وقت سے پر زور مطالبہ کرتے ہیں کہ ملز مان کو 24 گھنٹوں میں گرفتار کر کے عبرت ناک سزا دی جائے اور پورے پاکستان کے وکلاء کو سیکورٹی دی جائے اور حکومت کے وعدہ کے مطابق ممنوع بور کا اسلحہ دلوایا جائے عدالتوں کی سیکورٹی کو سخت سے سخت بنایا جائے ورنہ ہم عدالتوں کو بند کرنا پر مجبور ہو جائیں گے۔

تبصرے