Urdu News and Media Website

بھارت کے یوم جمہوریہ پر کشمیریوں کا یوم سیاہ ، لاہور میں احتجاجی مظاہرہ

لاہور(نیوزنامہ) بھارت کے یوم جمہوریہ کے خلاف یوم سیاہ مناتے ہوئے احتجاجی مظاہرے سے خطاب میں مختلف سیاسی وسماجی جماعتوں کے رہنمائوںنے کہا ہے کہ بھارت اپنے چہرے پر دنیا کی سب سے بڑی جمہوریت کا نقاب اوڑھے درحقیقت عالمی برادری کو گمراہ کررہاہے۔ یہ بھارت کی جمہوریت ہی ہے کہ وہ پچھلے ستر برسوں سے کشمیر پر غاصبانہ قبضہ جمائے ہوئے ہے اور کشمیریوں کو ان کا پیدائشی حق حق خوداردیت نہیں دے رہا۔ ان خیالات کا اظہار جموں وکشمیرلبریشن سیل کشمیرسنٹر لاہور کے زیراہتمام پریس کلب کے باہر احتجاجی مظاہرے سے مسلم لیگ کے رہنما غلام عباس میر، سابق کوآرڈینٹر برائے وزیراعظم مرزاصادق جرال، امیر جماعت اسلامی آزادکشمیرلاہور ڈویژن اعجاز احمد کیانی‘ انچارج کشمیر سنٹر لاہور سردارعظیم سرور،رکن پنجاب اسمبلی ڈاکٹر فرزانہ نذیر، رہنما تحریک انصاف فاروق آزاد‘ جنرل سیکرٹری ن لیگ لاہور ڈویژن مرزا عامر جرال‘ سابق امیدوار رکن اسمبلی مرزا عبدالرشید جرال ایڈووکیٹ، صدر کشمیرکمیٹی ہائی کورٹ بار منظورحسین گیلانی ایڈووکیٹ، چوہدری محمد صدیق، زرقا نسیم، سائرہ بانو اور دیگر مقررین نے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ غلام عباس میر نے کہا کہ بھارت کشمیر پر زبردستی قبضہ جماکر دنیا کو دھوکہ دے رہاہے کہ کشمیری اس کے ساتھ ہیں۔ ایم پی اے ڈاکٹرفرزانہ نذیر نے کہا کہ کشمیر کل بھی ہمارا تھا اور آج بھی ہمارا ہے۔ ہم کنٹرول لائن اور پاک بھارت سرحد پر بھارت کی جانب سے گولہ باری کی سخت مذمت کرتے ہیں۔ مرزا عامر جرال نے کہا کہ پاکستان کی قومی اسمبلی نے کشمیریوں سے یکجہتی کا اظہار کرتے ہوئے متفقہ قرارداد منظور کرکے درحقیقت کشمیریوں کی اخلاقی ، سفارتی اور سیاسی حمایت کا اعادہ کیا ہے۔ سردارعظیم سرور نے کہا کہ دنیا کی کوئی طاقت کشمیریوں کو ان کے پیدائشی حق سے محروم نہیں رکھ سکتی۔ منظور حسین گیلانی ایڈووکیٹ نے کہا کہ کشمیر کبھی بھی بھارت کا حصہ نہیں رہا۔ اس کی تمام سرحدیں پاکستان کے ساتھ ملتی ہیں اور وہ آزادی کے بعد بھی پاکستان کا ہی حصہ بنے گا۔

تبصرے