Urdu News and Media Website

بھارتی یوم آزادی یوم سیاہ کے طور پر منایا گیا

کشمیر سنٹر لاہور کے زیراہتمام سیاسی وسماجی جماعتوں نے بھارت کے یوم آزادی کویوم سیاہ کے طور پر مناتے ہوئے

پریس کلب لاہور کے باہر احتجاجی مظاہرہ کیا گیا۔

احتجاجی مظاہرہ سے خطاب کرتے ہوئے مقررین نے کہا کہ کشمیری عوام کے حق آزادی کو سلب کرکے

بھارت کو یوم آزادی منانے کا کوئی حق نہیں۔ بھار ت آج خود تو یوم آزادی منارہاہے

لیکن اس نے پون صدی سے ریاست جموں وکشمیر پر اپنا غاصبانہ قبضہ قائم کررکھا ہے۔

مظاہرہ سے سابق مشیر حکومت سید نصیب اللہ گردیزی، سابق ایم ایل اے مفتی شفیع جوش،

انچارج کشمیرسنٹر لاہو رسردار ساجد محمود، سینئررہنما پی ٹی آئی جاوید ڈار، سینئرنائب صدر پی ٹی آئی ویلیزپاکستان

راجہ امجد راٹھور،صدر جموں وکشمیرہیومن رائٹس ایسوسی ایشن ہمایوں زمان مرزا،

رہنما کل جماعتی حریت کانفرنس انجینئر مشتاق محمود،امیر جماعت اسلامی آزادکشمیر لاہور ڈویژن خوشحال شاہین،

رہنما پی ٹی آئی فاروق آزاد، آزادامیدوار کنٹونمنٹ بورڈ عمران افضل، سیکرٹری پراپرٹی ایسوسی ایشن لاہور ماجد خان،

اکمل سلہری، چیف آرگنائزر تحریک تحفظ حقوق کشمیر اشتیاق انجم سلہریا،رہنما یوتھ ونگ مسلم لیگ ن

جواد لطیف چغتائی ایڈووکیٹ، رہنما آل کشمیر فورم سفیر احمد خان عباسی، ڈاکٹرعبدالحمید، علامہ قاری محمدمشتاق،

خواجہ فاروق، رہنما پی ٹی آئی اصغرعباسی، حافظ ساجد، حافظ اسامہ، عامر لطیف اور دیگر نے خطاب کیا۔

یہ بھی پڑھیں:

بھارت کے یوم آزادی پر مقبوضہ کشمیر میں یوم سیاہ منایا گیا

سید نصیب اللہ گردیز ی نے کہا کہ بھارت لاکھ بار بھی کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کرے تب بھی وہ کشمیری عوام

کو محکوم رکھنے میں کامیاب نہیں ہوسکتا۔ آزادی کا سورج ایک دن ضرور طلوع ہوکر رہے گا۔

مفتی شفیع جوش نے کہا کہ ہمارے بزرگوں نے کشمیر کی آزادی کے لیے قربانیاں دیں۔

 

ہمارے بچے بھی ان قربانیوں میں شریک ہیں۔ ہم نے نہ پہلے بھارت کے ظلم کو قبول کیا نہ آئندہ کرینگے۔

سردارساجد محمود نے کہا کہ بھارت کو اگر زعم ہے کہ اس نے مقبوضہ کشمیر کو ہندوستان کا حصہ بنالیا ہے تو

وہ سرینگر میں سخت ترین سکیورٹی میں سے باہر نکل کر عوامی سطح پر اپنی آزادی کی کوئی تقریب منعقد کرکے

دکھادے اسے اپنی اوقات یاد آجائے گی۔ ہمایوں زمان مرزانے کہا کہ مقبوضہ جموں وکشمیر کے حقوق کو

بری طرح پامال کیاجارہاہے لیکن افسوس کہ اقوام متحدہ سمیت انسانی حقوق کے عالمی ادارے مکمل طور

پر خاموش ہیں۔ جاوید ڈار نے کہا کہ بھارت صرف مقبوضہ کشمیر کو ہی ہڑپ کرنے کا خواب نہیں دیکھ رہا

اس کی بری نظریں پاکستان پر بھی جمی ہوئی ہیں۔ عمران افضل نے کہا کہ بھارت ایک ہزار سال بھی

کشمیر ی عوام پر مظالم ڈھائے وہ تب بھی ان کے دلوں میں سے آزادی کا جذبہ مٹا نہیں سکتا۔

خوشحال شاہین نے کہا کہ آج دنیا بھر میں کشمیری بھارت کے یوم آزادی کو یوم سیاہ مناتے ہوئے

بھارت سے اپنی ازلی نفرت کا ثبوت پیش کررہے ہیں۔ دنیا کو اس جانب توجہ دینی چاہیے۔

انجینئر مشتاق محمود نے کہا کہ کشمیری عوام کے حق آزادی کو سلب کرکے بھارت کو یوم آزادی منانے

کا کوئی حق نہیں۔ بھارت کا یوم آزادی کشمیریوں کا یوم سیاہ ہے۔

لاہور(نیوز نامہ)

تبصرے