Urdu News and Media Website

اورنج لائن منصوبہ اربوں مالیت کی سرکاری اراضی پر ناجائز قابض

لاہور (فاروق احمد بودلہ ) اورنج لائن منصوبہ ، اربوں روپے مالیت کی سرکاری اراضی کے متعلق مجرمانہ غفلت ، اورنج ٹرین کی تعمیر کے دوران اربوں روپے مالیت کی سرکاری اراضی کو ڈمپنگ سائٹ بنا دیا۔

وحدت روڈ پر منصورہ سٹاپ کے قریب اربوں روپے کی قیمتی اراضی کنٹریکٹر کے قبضے میں ہےـ جہازی سائز کی کھڑی مشینری اور زنگ آلود پارٹس اداروں کی نااہلی کا منہ چڑا رہے ہیں۔

میٹرو اورنج لائن ٹرین منصوبہ میں ایل ڈی اے کی کوتاہی کا بڑا سکینڈل سامنے آگیا۔

اورنج ٹرین کی تعمیر کے دوران اربوں روپے مالیت کی سرکاری اراضی کو ڈمپنگ سائٹ بنا دیا۔ وحدت روڈ پر منصورہ سٹاپ کے قریب اربوں روپے کی قیمتی اراضی کنٹریکٹر کے قبضے میں ہے۔

پچاس کنال سے زائد اراضی پر غیر قانونی طور پر کنٹریکٹر کا بیچنگ و مکسنگ پلانٹ لگایا گیا۔ 2014 میں اورنج ٹرین پیکج ٹو کی تعمیر میں استعمال ہونے والے میٹریل کے لیے کاسٹنگ یارڈ بنایا گیا۔

مقبول کالسنز نے وحدت روڈ پر جہازی سائز کی مشینری لگا کر کاسٹنگ یارڈ بنایا۔ مقبول کالسنز کو بلیک لسٹ کرنے کے بعد کاسٹنگ یارڈ زیڈ کے بی کے حوالے کر دیا گیا۔

دونوں کنٹریکٹرز کے بلز کے معاملے پر جاری جھگڑے کے سبب سرکاری اراضی غیر قانونی طور پر قبضے میں ہے۔
اورنج ٹرین کے آپریشنل ہونے کے بعد بھی اس پلاٹ کو خالی نہ کروایا گیا ۔

وحدت روڈ پر کاسٹنگ یارڈ کی جگہ پر  کنکریٹ، ریت اور بلڈنگ میٹیریل کے پہاڑ بنے ہیں۔ جہازی سائز کی کھڑی مشینری اور زنگ آلود پارٹس اداروں کی نااہلی کا منہ چڑا رہے ہیں۔

اورنج ٹرین  کے بننے والے کاسٹنگ یارڈ پر تین سالوں سے کسی نے توجہ نہ دی۔ سرکاری پیسوں سے خریدی گئی مشینری کو بھی کاسٹنگ یارڈ میں لاوارث چھوڑ دیا گیا۔

ایل ڈی اے انتظامیہ کا کہنا ہے کہ مقبول کالسنز اور زیڈ کے بی کے بلز کے معاملات حل ہورہے ہیں۔کنٹریکٹر کو ہدایات کی ہیں کہ مشینری کی شفٹنگ کرے۔

تبصرے