تحریک تجدید طب پاکستان کی طرف سے انتہائی اہم اجلاس کا انعقاد

263

لاہور (نیوزنامہ) تحریک تجدید طب پاکستان کی طرف سے انتہائی اہم اجلاس مرکزی دفتر حکیم انقلاب طبی کونسل پاکستان میں منعقد ہوا جس میں ملک بھر سے علاج بالغذا ء ( قانون مفرد اعضاء) کی تمام نمائندہ جماعتوں کے سربراہان و ممبران نے شرکت کی ۔اس اہم ترین اجلاس کا بنیادی مقصد طب مفرد اعضاء ( علاج بالغذاء) کی تمام نمائندہ جماعتوں کے درمیان باہمی اشتراک اور اتحاد کی فضا بحال کرنا اور حکیم انقلاب حضرت علامہ دوست محمد صابر ملتانی ؒ کے پیش کردہ جدید اصول ِ علاج کی حقیقی ترجمانی کیلئے ملکی سطح پر ایک مرکزی سپریم کونسل کا قیام تھا ۔ تحریک تجدید طب پاکستان حکیم انقلاب حضرت دوست محمد صابر ملتانی ؒ کی قائم کردہ جماعت ہے جسے الحمد اللہ انٹرنیشنل سطح پر رجسٹرڈ کروایا جا چکا ہے ۔ جس کا بنیادی مقصد اپنے اصلاف کے ورثہ کو قائم و دائم رکھنا اور اسے آگے بڑھانا ہے ۔ سپریم کونسل کے قیام سے طب مفرد اعضاء کو فروغ ملے گا اور ملکی سطح پر گروہوں میں تقسیم اطباء کو اکٹھا کر کے ایک طاقت بنایا جائے گا۔ان خیالات کا اظہار پروفیسر حکیم محمد شفیع طالب قادری ، حکیم شبیر احمد راں ، حکیم غلام فرید میر ، حکیم منیر احمد شکوری ، حکیم اشفاق احمد ، حکیم محمد اکرم مغل ، حکیم نذیر احمد چوہدری ، حکیم محمد رفیق شاہین ، حکیم محمد نذیر،حکیم غلام مرتضی مجاہد، حکیم محمد یعقوب اطہر ، حکیم محمد اصغر ،حکیم عبد الرزاق ، حکیم عبد العزیز اور ڈاکٹر عاصم رفیق نے کیا۔اجلاس سے تمام اضلاع سے آئے ہوئے اطباء نے اپنی مفید تجاویز پیش کیں اور باہمی اتحاد و اشتراک کو قائم و دائم رکھنے پر زور دیا ۔اجلاس میں حکیم محمد اسلم طالب، حکیم محمد افضل میو ، حکیم مرزا خان ، حکیم محمد مشتاق ،حکیم و ڈاکٹر محمد عابد شفیع، حکیم مشتاق احمد، حکیم صوفی محمد انور قادری ، حکیم محمد رفیق ، حکیم حاجی محمد لطیف، حکیم محمد طیب ، حکیم محمد اسحاق ، حکیم فیض علی ، حکیم محمد احمد ، حکیم رانا عبدالغفور ، حکیم طبیب محمد عاصم ، حکیم عبد الحکیم ، حکیم محمد ابو بکر ، حکیم محمد عبداللہ ابو بکر رفیق ، حکیم محمد عرفان شہزاد ، ڈاکٹر طیب نثا ر شیرازی ،حکیم محمد شاہد قادری ،حکیم و ڈاکٹر محمد ساجد شفیع اور اطباء کی کثیر تعداد موجود تھی ۔ حکماء نے اجلاس میں اس عزم کا اظہار کیا کہ تمام معالجین اطباء ذاتی مفادات سے بالا تر ہو بارہا قائم شدہ وقتی اتحاد کی روش کو ختم کر کے ہی ایک متحد قوت بن کر ابھر سکتے ہیں ۔ طب مفرد اعضاء کی حقیقی ترجمانی کیلئے ذاتی رنجشوں کے بھلاکر آگے بڑھنا ہوگا۔ یہی وجہ ہے کہ آج یہاں پر بلا تفریق تمام معزز اطبا ء کرام کو مدعو کیا گیا ہے تاکہ وقتی اتحاد کی روش کا خاتمہ ہو سکے اورمحافظان طب مفرد اعضاء کی عظیم الشان قربانیوں کا حقیقی ثمر حاصل ہو ۔

اسے بھی پڑھیں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.