سالگرہ کا کھانا 14 ماہ پرانا

سالگرہ کا کھانا 14 ماہ پرانا ،لوگوں کی زندگی میں سالگرہ کا دن ایک اہم دن ہوتا ہے۔اور سب ہی اسے یادگار بنانا چاہتے ہیں۔

سالگرہ کے حوالے سے سوشل میڈیا پر آئے روز مختلف لوگوں کی طرف سے کی گئ عجیب و غریب حرکیتیں دیکھنے کو ملتی ہیں۔ایسا ہی ایک حرکت ہوئی جہاں ایک شخص نے سالگرہ کا کھانا 14 ماہ پرانا رکھا ہوا تھا۔
آیئے آپ کو ایسے ہی ایک شخص کے بارے میں بتاتے ہیں جس نے 14ماہ پرُانا زمین میں دبا کھا نا کھا لیا۔

جی ہاں یہ بات سوچنے میں عجیب لگتی ہے اور یقین کر نا بھی مشکل ہوجاتا ہے۔
مگر ایک برطانوی شہر ی نے اپنی سالگرہ کو یادگار بنانے کیلئے ایسا کر دکھایا ۔
14ماہ سے زمین میں دبا کھا نا نکال کر کھا لیا اور بیمار بھی نہیں ہوا۔

ہوا کچھ یوں کہ برطانوی شہری اپنی سالگرہ کو یادگار بنانے کے لیے زمین میں دفن کیا گیا 14 ماہ پُرانا کھانا کھا گیا۔

برطانیہ کے شہر یارکشائر کے رہائشی میٹ نوڈن نے نومبر 2018 میں کھانے کی ایک ڈیل منگوائی

جس میں برگر، فرائز اور چاکلیٹ ملک شیک شامل تھا۔

میٹ نوڈن نے اپنی 39 ویں سالگرہ کے کچھ عرصے بعد اس ڈیل کو اپنے دوست کے گارڈن میں گڑھا کھود کر دفنا دیا۔

میٹ نوڈن نے اپنی 40 ویں سالگرہ پر بھی اس ڈیل کو نکال کر کھانے کی کوشش کی ۔

 

یہ بھی پرھیں:

تیسری شادی پر دُلہےکی ہوئی خوب دھلائی

 

مگر وہ ایسا نہ کر سکا اور پھر وہ 14 ماہ بعد اپنی 41 ویں سالگرہ کو یادگار بنانے کے لیے اس کھانے کو نکال کر اسی ریسٹورینٹ میں لے گیا

جہاں سے اس نے وہ ڈیل خریدی تھی۔

میٹ ناڈن بڑے فخر سے اس ڈیل کو کھانے کی ویڈیو اپنے یو ٹیوب چینل پر اپ لوڈ کی

اور بتایا کہ وہ یہ کھانے سے بیمار بھی نہیں ہوئے۔

اس کے علاوہ ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ برگر نم ہو چکا ہے، فرائز میں پھپھوندی لگ چکی ہے
اور ملک شیک بھی گوندھے ہوئے آٹے کے مانند ہونے کے ساتھ سرمئی رنگ کا ہو گیا۔

میٹ ناڈن نے بوسیدہ کھانے کو کھاتے ہوئے اس بات کا اقرار بھی کیا،

 

یہ بھی پرھیں:

فلمی سین ہوا حقیقت میں تبدیل،کوا بریانی کے بھی چرچے

کہ فرائز بہت زیادہ خطرناک تھیں اور اس میں سے نمی بلکل ختم ہو گئی تھی
جبکہ ملک شیک کا ذائقہ بھی بہت عجیب تھا، کھانے کا کچھ حّصہ بہت عجیب تھا ،
مگر یہ اتنا بُرا نہیں جتنا میں سمجھ رہا تھا۔

14ماہ پرانا کھانا کھانے کی ویڈیو یہاں دیکھیں

ان کا مزید کہنا تھا کہ برگر اتنا بُرا نہیں تھا البتہ یہ نمی کے باعث گیلا ہو گیا تھا اور اس کا ذائقہ بھی وہ نہیں رہا تھا۔

یہ بھی پرھیں:

دنیا کے بہادر مینڈک نے تاریخ بدل دی، دیکھنے والے حیران و پریشان

میٹ نوڈن کا کہنا تھا کہ میں اپنے کالج کے زمانے سے

اس طرح کے کھانے پینے کے چیلنجز کرتا رہتا ہوں

اور ایسا کرنے سے میں بیمار بھی نہیں ہوتا۔

یہ بھی پرھیں:

پاکستان کے آسیب زدہ مقامات اور دل دہلا دینے والی داستانیں

تبصرے بند ہیں.