عوام کیلئے ریلیف پیکج ،،، وزراء کا حیران کن موقف

وفاقی کابینہ کے اجلاس میں وزیراعظم کا عوام کیلئے ریلیف پیکج،کئ اہم وزراء نے ریلیف پیکج کی مخالفت کر دی۔

جیو نیوزکی رپورٹ کے مطابق وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس ہوا جس میں ملکی معاشی صورتحال پر غور کیا گیا اور کئی اہم فیصلے کیے گئے۔اجلاس میں عوام کیلئے ریلیف پیکج کی بھی منظوری دے دی گئ۔

اس ریلیف پیکج میں یوٹیلیٹی اسٹورز پیکج کی منظوری دی گئی۔

یوٹیلٹی اسٹورز پیکج میں یوٹیلٹی اسٹورز کو 10 ارب روپے جاری ہوںگے۔

اس کے علاوہ ماہ رمضان میں یوٹیلٹی اسٹورز کو 5 ارب روپے الگ سے ملیں گے۔

جس کے بعد یوٹیلٹی اسٹورز پر آٹا، گھی، دالیں، چینی اور چاول کی قیمتوں میں کمی ہوگی۔

اورمارکیٹ سے 10 سے 25 فیصد کم ریٹ پر ملیں گے۔

تاہم وزیر دفاع پرویز خٹک، وزیر سائنس و ٹیکنالوجی فواد چوہدری، وزیر برائے کشمیر و گلگت بلتستان امور علی امین گنڈا پور سمیت کئی وزراء نے یوٹیلٹی اسٹورز پیکج کی مخالفت بھی کی۔

وزراء کا مؤقف تھا کہ یوٹیلٹی اسٹورز کو اربوں روپے دینے کے بجائے پیٹرول اور ڈیزل کی قیمتیں کم کی جائیں۔ 

وزیراعظم عمران خان کی معاون خصوصی برائے اطلاعات فردوس عاشق اعوان نے کابینہ اجلاس کے بعد میڈیا بریفنگ میں بتایا کہ وزیر اعظم نے یوٹیلیٹی اسٹورز کو 5 ماہ کے لیے 2 ارب روپے ماہانہ سبسڈی کی منظوری دی ہے۔

انہوں نے مزید بتایا کہ مستحق افراد کو راشن کارڈز رمضان سے پہلے ملیں گے۔

حکومت یوٹیلٹی ا سٹورز کے اشتراک سے 200 نوجوان اسٹور کھولیں گے ۔

جس سے 4 لاکھ افراد کو بالواسطہ اور 8 لاکھ افراد کو بلاواسطہ روزگار ملےگا۔

واضح رہے کہ ملک میں مہنگائی کا جن بے قابو ہوگیا ہے۔

یہ بھی پرھیں:

وزیراعظم عمران خان نے بڑی پیش گوئی کر دی

 اور رواں سال کے پہلے مہینے میں مہنگائی کی شرح 14.6 فیصد رہی ۔

یہ بھی پرھیں:

مسلم لیگ ن نےبڑی تلاشی کامطالبہ کردیا

جو کہ پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) حکومت میں سب سے زیادہ ہے۔

اسلام آباد(نیوز نامہ)

یہ بھی پرھیں:

ملک ریاض نے جماعت اسلامی کو چونا لگا دیا

 

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.