انسان کب اور کیسے دہشتگرد بن جاتا ہے

33

تحریر:ڈاکٹر فاطمہ ذاکر….
2009 میں پاکستان میں دہشتگردی عام تھی۔ سکول میں ٹیچر نے ہمیں دہشتگردی پر ایک مضمون لکھنے کو کہا ۔ ہمیں دہشتگردی کے بارے میں کچھ علم نہیں تھا۔ دوسرے ٹیچر سے ہم نے دہشت گردی کے بارے میں جاننے کی کوشش کی تو
ہمیں ٹیچر نے بتایا کہ انسان دہشتگرد کب اور کیسے بنتا ہے۔ جب انسان کو اپنا جائز حق نہیں دیا جاتا ہے ۔اور وہ اُس جائز حق کو ناجائز طریقے سے حاصل کرتا ہے ۔
تو اِس ناجائز طریقے سے یہ دہشت گرد بن جاتا ہے۔
1/3/2015
کو پشاور میں بوڑھے والد
عنایت اللہ خان اپنے بھائیوں اوربیٹے کے ہمراہ اپنےگھر پر موجود تھا۔کہ ملزمان جمیل ومختیار ولد عبدالحنان نے اچانک فائرنگ کی جس میں اُسکا بیٹا قتل ہوا ۔ قتل کیخلاف متعلقہ تھانے میں ایف آئی آر درج کرنے کے باوجود پولیس نے ملزمان سے رشوت لیکر ایس ایچ او متنی کی ایماء پر ایف آئی آر درج کردی جس میں کندے جچوخیل کے 29 افراد کو ملزمان نامزد کیا گیا ہے جو بالکل غلط اوربے بنیاد ہے جس کا مقصد ملزمان کو سزا سے بچانا ہے۔علاقہ پولیس ایس۔ ایچ ۔او بوقت قتل موجودگی اور قاتلوں کو فرارکرنے اور مقتول کے وارثان کو اسلحہ کی نوک پر ہراساں کرنا نماز جنازہ میں ہراساں کرنا وارثان کو شرکت کرنے نہ دینا پولیس ڈیپارٹمنٹ پر سوالیہ نشان ہے
عنایت اللہ نے پریس کانفرنس میں کہا تھا کہ طالبِ علم بیٹے کے قتل سے میری دنیا ہی ختم ہوگئی
میرے باقی بچوں کی تعلیم بھی متاثر ہوئی اور ہمیں ذہنی اور جسمانی و مالی نقصان پہنچایا گیا ہے ۔اگر مجھے انصاف نہیں ملا تو میں وزیراعلی ہاوس کے سامنے خود سوزی کروں گا
دوستو انسان کی دہشتگرد بننے کی شروعات یہاں سے ہوتی ہے ۔اگر عنایت اللہ جیسے مظلوم لوگوں کو انصاف ملے ۔تو یہ ہماری کامیابی ہے ۔اور اگر اِن جیسے بہت سے لوگوں کو انصاف نہ ملے تو یہ ایک لمحہ فکریہ ہوگا
(میں خود بحیثیت صحافی) میری
وزیراعظم ، صدر پاکستان ، چیف جسٹں آف پاکستان اوروزیراعلیٰ خیبرپختونخوا سے اپیل ہے ۔ کہ عنایت اللہ کو انصاف فراہم کیا جائے کیوں کہ یہ اِن کا قانونی اور اسلامی حق ہے
مقتول کے ورثاء کو انصاف فراہم کیا جائے
تاکہ مقتول کے باقی بھائی اپنی تعلیم جاری رکھ سکیں
آپ میں کوئی بھی اس مظلوم خاندان کی مدد کرنا چاہتا ہو تو اس نمبر پر رابطہ کر سکتا ہے 03119164878

نوٹ:نیوز نامہ پر شائع ہونے والی تحریر لکھاری کی ذاتی رائے ہے، ادارے کا متفق ہونا ضروری نہیں.

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.