مرگی ورکشاپ کا مقصد صحیح علاج و تشخیص سے آگاہی اور معالجین کو تربیت دینا ہے: ڈاکٹر فوزیہ صدیقی

21

کراچی (نیوزنامہ ) ممتاز نیورولوجسٹ و مرگی کے مرض کی ماہر ڈاکٹر فوزیہ صدیقی مرگی کے مرض پر ایبٹ آباد، نتھیا گلی میں منعقد ہونے والی ’’تین روزہ ورکشاپ‘‘ میں شرکت کریں گی۔ واضح رہے کہ ڈاکٹر فوزیہ صدیقی مرگی کے مرض کی روک تھام اور صحیح تشخیص و علاج کیلئے ’’ کوشاں ہیں۔ وہ اور ڈاکٹر راشد جوما اس ورکشاپ کے آرگنائزر بھی ہیں۔ نتھیا گلی روانگی کے موقع پر ورکشاپ کی تفصیلات بتاتے ہوئے ڈاکٹر فوزیہ صدیقی نے کہا کہ ایپی لیپسی (مرگی) منی فیلوشپ ایک ایسی ورکشاپ ہے جو نیوروڈاکٹر کو مرگی کی تحقیق، تشخیص اور بہترین و جدید علاج کے طریقے سکھاتی ہے۔ یہ ورکشاپ امریکہ کے ’’ Kiffen Penry epi minifellows association‘‘ ہے اور پاکستان میں ڈاکٹر فوزیہ صدیقی معروف نیورولوجسٹ اور ایپی لیپسی فائونڈیشن پاکستان کی صدر اور معروف نیوروسرجن ڈاکٹر راشد جوما کے توسط سے اس سال نتھیا گلی میں منعقد کی جارہی ہے۔ اس 3 روزہ ورکشاپ کا مقصد پاکستان میں بڑھتے ہوئی مرگی کے مرض کی صحیح علاج اور تشخیص سے آگاہ کرنا اور معالجین کو تربیت دینا ہے۔ اس سلسلے میں ڈاکٹر فوزیہ صدیقی نے مرگی کی منیجمنٹ (Epilepsy Management) کے لئے گائیڈلائنز بھی بنائی ہیں۔ اس ورکشاپ میں ملک کے مشہور اور مستند نیورولوجسٹ معالجین کے لیکچرز بھی ہوں گے جن میں تین روزہ ورکشاپ کے آگنائزرز اور آغا خان اسپتال کی ڈاکٹر فوزیہ صدیقی اور ڈاکٹر راشد جوما، ڈاکٹر عزیز سوناوالا، ڈاکٹر واسع، سائوتھ سٹی ہسپتال کے ڈاکٹر نادر سید، ڈاکٹر مغیث شیرانی، جناح پوسٹ میڈیکل سینٹر کے ڈاکٹر خالد شیر اور شفا انٹرنیشنل کے ڈاکٹر ارسلان مرگی کے مرض پر لیکچرز دیں گے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.