سندھ کرپشن کا گڑھ ،زرداری کی بہن منی لانڈرنگ میں ملوث ہیں:عمران خان

کراچی (نیوز نامہ)پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے کہ پاکستان میں سب سے زیادہ کرپشن سندھ میں ہے آصف زرداری کی بہن کرپشن میں ملوث ہیں اوروہ کرپشن کا پیسہ منی لانڈرنگ کے ذریعے باہر بھیجتی ہیں‘دہشتگردی کے خاتمہ کیلئے کرپشن کا خاتمہ ضروری ہے، آصف زرداری اورفریال تالپور کوقانون کے کٹہرے میں لانا ہو گا،غیر جانبدار احتساب کے بغیرمسائل حل نہیں ہوں گے‘نیب کرپشن اور منی لانڈرنگ کی تحقیقات کرے‘پی آئی اے میں سفارشی بھرتیوں کے باعث قومی ادارہ تباہ ہو گیا‘ خیبرپختونخوا کے اداروں میں سیاسی مداخلت ختم کردی، سندھ میں اگلا جلسہ 5 نومبر کو ہو گا‘اس بار پارٹی ٹکٹ سوچ سمجھ کر دیں گے۔ عمران خان نے سندھ حکومت پر کرپشن میں ملوث ہونے کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ سندھ ملک کا سب سے تباہ حال صوبہ ہے ، آصف زرداری کی بہن کرپشن میں ملوث ہیں اوروہ کرپشن کا پیسہ منی لانڈرنگ کے ذریعے باہر بھیجتی ہیں۔عمران خان نے تجویز دیتے ہوئے کہا کہ منی لانڈرنگ کی وجہ سے ملک میں ڈالرز کی کمی ہوجاتی ہے اور حکومت کو قرضے لینے پڑتے ہیں، چیئرمین نیب کو دبئی میں8 ارب روپے کی پراپرٹیز کی تحقیقات کرنی چاہئے ،سندھ میں کرپشن کا پیسہ باہر جا رہا ہے ،نیب کرپشن اور منی لانڈرنگ کی تحقیقات کرے،انہوں نے کہا کہ ملک سے دہشتگردی اور کرپشن کا خاتمہ کرنا ہوگا،دہشتگردی کے خاتمہ کیلئے کرپشن کا خاتمہ ضروری ہے، آصف زرداری اورفریال تالپور کوقانون کے کٹہرے میں لانا ہو گا،غیر جانبدار احتساب کے بغیرمسائل حل نہیں ہوں گے۔عمران خان نے کہا کہ پاناما سے فارغ ہو گئے ہیںاب اندرون سندھ ،کراچی ،حیدرآباد اور دیگر شہروں پرخصوصی توجہ دیں گے ،چیئرمین پی ٹی آئی کا کہنا تھا کہ ہر روز480 ملین گیلن گندہ پانی سمندر میں ڈالا جا رہا ہے جس سے سمندری حیات کوتباہ کیا جا رہا ہے،انہوں نے کہا کہ کراچی میں سیوریج کا ناقص نظام،ٹوٹی پھوٹی سڑکوں اور گندگی کی وجہ کرپشن ہے یہاں پر لگنے والا پیسہ چوری ہو کر باہر جا رہا ہے۔چیئرمین تحریک انصاف نے کہا کہ نجکاری اداروں کے مسائل کا حل نہیں، پی آئی اے میں سفارشی بھرتی کئے گئے جس کی وجہ سے قومی ادارہ تباہ ہو گیا ،ہمیںاداروں میں پیشہ وارانہ ماہرین لانا ہوں گے ،سندھ میں لوکل گورنمنٹ کے پاس اختیار ہی نہیں، اختیارات نہ ہونے کے باعث عوام کے مسائل حل نہیں ہوتے ،بلدیاتی نظام ٹھیک ہونے تک مسائل حل نہیں ہوں گے

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.