پی ٹی آئی حکومت اور نیب آمنے سامنے

96

لاہور(ویب ڈیسک)پی ٹی آئی حکومت اور نیب آمنے سامنے۔وفاقی وزیراطلاعات فواد چودھری نے علیم خان کے حق میں ٹویٹ کیا تو قومی احتساب بیورو نے فوری نوٹس لے لیا،جس پر فواد چودھری نے پھر ٹویٹر کا محاذ سنبھالا اور ٹویٹ کیا کہ نیب فضول بیانات کی بجائے کام پرتوجہ دے۔تفصیلات کے مطابق وفاقی وزیراطلاعات و نشریات فواد چودھری نے اپنے ٹویٹ بیان میں کہا کہ اگر اربوں کھانے والے ملزموں کو اتنی آسانی سے ضمانت مل سکتی ہے تو پھر ایک کاروباری آدمی کو بھی ضمانت ملنی چاہئے،عبدالعلیم خان کا مقدمہ کم سنگین ہے،ان پر سرکاری خزانے کو نقصان پہنچانے کا بھی کوئی الزام نہیں ،علیم خان کو اپوزیشن کے شورکی وجہ سے ناکردہ جرم کی سزا دی جارہی ہے۔فواد چودھری کا بیان سامنے آتے ہی نیب نے نوٹس لے لیا،نیب اعلامیے کے مطابق وفاقی وزیراطلاعات فواد چودھری کے نیب سے متعلق ماضی اور حالیہ بیانات کا جائزہ لینے کا فیصلہ کیا گیا ہے،،جائزہ لیا جائے گا کہ وفاقی وزیراطلاعات کے بیانا ت نیب کے معاملات میں مداخلت تو نہیں،بیانات نیب کی انکوائریز یا انویسٹی گیشن پر اثرانداز ہونے کی کو شش تونہیں ہے۔نیب نے اعلامیہ جاری کیا تو وفاقی وزیراطلاعات فواد چودھری ایک پھر میدان میں آئے اور ٹویٹ داغا کہ سارا دن حلقے میں مصروف رہا یہ شاہکار نظر سے اوجھل رہا،اس رویے سے اندازہ ہوتا ہے کہ نیب کپیسٹی کے کس قدر سنجیدہ بحران کا شکار ہے،انہیں یہ بھی نہیں معلوم کہ ضمانت دینا ان کے اختیار می نہیں تو مداخلت کیسے ہوئی،یہ پیچیدہ مقدمے کہاں سے حل کریں گے،فضول بیانات کے بجائے کام پر توجہ دیں۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.