’یونیورسٹی تو کیا، پاکستان کی تاریخ میں کسی نے اتنے میڈل نہیں لیے‘

پشاور(ویب ڈیسک)دو پاکستانی طالبات نے یونیورسٹی لیول پرمیڈل حاصل کرنے میں ریکارڈ قائم کر دیا۔تفصیلات کے مطابق پاکستان میں سرکاری طور پر تو ایسا کوئی ریکارڈ نہیں رکھا جاتا کہ ماضی میں کس نے کتنے میڈل حاصل کیے،مگر حال ہی میں 2 لڑکیوں کے جانب سے حاصل کیے جانے والے میڈلز کی تعداد اتنی ہے کہ اس پہلے کسی نے اتنے میڈلز حاصل نہیں کیے ہوں گے۔خیبر پختونخوا کی مژدہ سبحان نے حال ہی میں خیبر میڈیکل یونیورسٹی پشاور سے ایم بی بی ایس میں 19 گولڈ میڈل حاصل کیے ہیں۔ جبکہ دوسری جانب پنجاب میڈیکل یونیورسٹی فیصل آباد کی رعنا اسلم نے بی ڈی ایس میں 18 گولڈ میڈل لیے ہیں۔تھوڑی سی نظر ان کی تعلیمی زندگی پر بھی ڈال لیتے ہیں۔

مژدہ سبحان کی تو پوری تعلیمی زندگی قابلِ رشک ہے۔ میٹرک میں پشاور بورڈ میں تیسری پوزیشن لینے کے بعد انٹرمیڈیٹ میں نہ صرف پشاور بورڈ ٹاپ کیا بلکہ پورے صوبے میں سب سے زیادہ نمبر لیے۔ میڈیکل کالج انٹری ٹیسٹ میں پورے صوبے میں پہلے نمبر پر آئی تھیں۔مژدہ سبحان بتاتی ہیں ’بچپن میں ڈاکٹر بننے کا شوق نہیں تھا بلکہ والدہ کی طرح استاد بننا چاہتی تھی۔ مگر مجھ سے بڑی بہنوں نے جب میڈیکل کی تعلیم حاصل کی، جو اب ڈاکٹر بن چکی ہیں، تو میں نے بھی میڈیکل ہی میں جانے کا فیصلہ کر لیا۔
اور دوسری جانب رعنا اسلم کی کہانی سن کر لگتا ہے کہ ان کی ہمت جیسے پہاڑ چیر دیتی ہو گی۔ پانچ بہن بھائیوں میں سب سے بڑی رعنا کے مرحوم والد ایک بینکر تھے اور ان کا بچپن لاہور، اسلام آباد کے علاوہ مختلف شہروں میں گزرا۔ مگر اس مشکل کے باوجود وہ سکول میں متواتر پہلی پوزیشن لیتی رہیں۔رعنا اسلم بتاتی ہیں کہ ’میں جانتی تھی کہ دنیا اتنی آسان نہیں ہے اور صرف تعلیم اور اعلیٰ نمبروں سے کامیابی ہی میرے لیے بند راستے کھول سکتی ہے۔ اس وجہ سے پڑھائی میں وہ سب کچھ کیا جو ممکن تھا۔‘

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.