ایک بال پر 286 رنز

25

کینبرا(ویب ڈیسک)نظریے کے مطابق آپ وکٹ پر دوڑ کر جتنے چاہیں اسکور کرسکتے ہیں،یہاں تک کہ آپ رن آؤٹ نہیں ہو جاتے۔26 مئی 1894 میں آسٹریلیا میں ایک میچ کے دوران ایسا ہوا کہ گیند درخت میں پھنس گئی اور بلے بازوں نے دوڑ دوڑ کر 286اسکور بنا ڈالا۔ہوا کچھ یوں کہ بلے باز نے میچ کی پہلی ہی بال پرشاندار شارٹ کھیلتے ہوئے گیند کو ہوا میں پھینکا تو گیند درخت میںاٹک گئی،اور بلے بازوں نے ایک ہی بال پر 286 رنز بنا ڈالے۔مخالف ٹیم نے بال کے کھوجانے اور دوبارہ بال کرانے کی درخواست کی ،جس کی امپائرز نے مخالفت کرتے ہوئے کہا کہ بال نظر آرہی ہے لہذا بال کے کھوجانے کا اصول لاگو نہیں ہوتا۔امپائرز کی اسی بات کا فائدہ اُٹھاتے ہوئے بلے بازوں نے اسکور بنانا جاری رکھا۔مخالف ٹیم کی جانب سے کلہاڑی ڈھونڈنے کی کوشش کی گئی،تاکہ درخت کو گر اکربال تک رصائی حاصل کی جاسکے، مگر کہلاڑی نہ مل سکی،پھر فیصلہ یہ ہوا کہ بال کو بندوق کی گولی سے نیچے گرِایا جائے۔بہت ساری کوششوں کے بعد آخر کار بال کو نشانہ لگا اور بال نیچے آگری۔مخالف ٹیم کی جانب سے کیچ کرنے کی زحمت بھی نہ کی گئی۔اور اس دوران بلے باز 286 رنز بنا چکے تھے۔یہ بات ہے 1894 کی مگر اب حالیہ اصولوں کے مطابق آپ 6 رنز سے زائد اسکور نہیں کر سکتے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.