پنجاب کے سرکاری محکموں کے انجینئرزنے تبدیلی سرکار کے خلاف کمر کس لی

138

لاہور(نمائندہ خصوصی)پنجاب کے سرکاری محکموں کے انجئینرز نے تبدیلی سرکار کے خلاف کمر کس لی۔پنجاب ایسوسی ایشن آف گورنمنٹ انجنیئرز کی جانب سے محمکہ مواصلات و تعمیرات میں احتجاجی کیمپ کا انعقاد کیا گیا ، محکمہ مواصلات، آبپاشی، پی اینڈ ڈی سمیت دیگر محکموں کے مردو خواتین انجینئیرز نے تنخواہوں میں اضافے سمیت دیگر مطالبات کی منظوری کیلئے صدائے احتجاج بلند کی،پنجاب ایسوسی ایشن آف گورنمنٹ انجنیئرز نے مطالبات کی منظوری کیلئے محمکہ مواصلات و تعمیرات میں احتجاجی کیمپ کا انعقاد کیا۔

یہ بھی پڑھیں:اسلحہ لائسنس کی کمپیوٹرائزیشن نہ کروانے والوں کیخلاف شکنجہ تیار

لاہور سمیت صوبہ بھر کے انجیئنرز گزشتہ 22 روز سے غیر منصفانہ تنخواہوں کے خلاف قلم چھوڑ ہڑتال پر ہیں۔صوبائی وزیر آبپاشی محسن لغاری نے اظہار یکجہتی کیلئے احتجاجی کیمپ کا دورہ کیا۔ انجینئرز نے ٹیکنیکل الاونس کی منظوری اور سروس سٹرکچر بہتر بنانے کا مطالبہ کیا ۔مہنگائی کے دور میں کم تنخواہوں اور دیگر مسائل کے متعلق بھی انجینئیرز نے تحفظات کا اظہار کیا۔

یہ بھی پڑھیں:پنجاب میں بڑے پیمانے پر افسران کے تقرروتبادلے

انجینئیرز کاکہنا ہے کہ پنجاب بھر سے مختلف محکموں کے انجینئیرز 19 دسمبر کو چیئرنگ کراس پر سراپا احتجاج بنیں گے اور احتجاجی دھرنا دیا جائے گا جو مطالبات منظوری تک جاری رہے گا۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.