رجسٹرڈ کوالیفائیڈ طبیب مائنر سرجری کرنے کا مجاز ہے:حکیم سید عمران فیاض

167

لاہور (نیوز نامہ ) رجسٹرڈ اطباءکے مائنر سرجری کرنے پر نیشنل کونسل فار طب کی جانب سے کوئی پابندی نہیں لگائی ہے ، گزشتہ چند دنوں سے بعض ٹیلی ویژن چینلز اور اخبارات میں یہ حقائق کے منافی خبر بار بار دکھائی جارہی ہے کہ نیشنل کونسل فارطب کی جانب سے رجسٹرڈ کوالیفائیڈ اطباءکے مائنر سرجری کرنے پر پابندی عائد کردی گئی ہے ، رجسٹرار محمداسماعیل خان اور ترجمان نیشنل کونسل فار طب حکیم محمداحمدسلیمی نے وضاحت کرتے ہوئے بتایا ہے کہ نیشنل کونسل فار طب کے تحت چارسالہ کورس فاضل الطب والجراحت اور پانچ سالہ ڈگری کورس بیچلر آف ایسٹرن میڈیسن اینڈ سرجری کرایا جاتا ہے اور ان کے نصاب میں باقاعدہ جراحت صغیرہ شامل ہے، اس لیے ایک کوالیفائیڈ اور رجسٹرڈ طبیب جراحت صغیرہ کرنے کا مجاز ہے -اس موقع پر پروفیسر حکیم سید عمران فیاض ,حکیم افضل میئو بھی تھے.. انہوں نے وضاحت کرتے ہوئے مزید کہا کہ گزشتہ دنوں ینگ ڈاکٹرز کی جانب سے اطباءکے جراحت صغیرہ (مائنر سرجری ) کرنے کے نوٹیفکیشن کے خلاف درخواست دی جس پر وفاقی محتسب نے کونسل سے مو ¿قف طلب کیا – نیشنل کونسل فار طب کی جانب سے مو ¿قف دیتے ہوئے وفاقی محتسب کو بتایا گیا کہ رجسٹرڈ ´ طبیب اپنے طریقہ علاج کے مطابق مائنر سرجری کرنے کا مجاز ہے اور قانون اس بات کی اجازت دیتا ہے – تاہم کوئی بھی رجسٹرڈ طبیب مائنر سرجری کرتے ہوئے ایلوپیتھک ادویات ا نجیکشن ، انیستھیزیا وغیرہ استعمال نہیں کر تا – تمام ٹیلی ویژن چینلز اور پریس میڈیا سے درخواست ہے کہ نیشنل کونسل فار طب کی جانب سے یہ وضاحتی خبر ضرور نشر کریں- کہ کونسل کی جانب سے رجسٹرڈکوالیفائیڈ طبیب حکیم کے جراحت صغیرہ (مائنر سرجری ) کرنے پر پابندی نہیں لگائی گئی ہے –

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.