سرگودھا فیصل آباد روڈ پر بنی سلائیڈیں انتہائی خطرناک،رواں سال51افراد جان سے گئے

خونی روڈپررواں سال51افراد ہلاک اور1007 سے زائد زخمی ۔سروے رپورٹ

186

چنیوٹ( مہراظہروینس ) سرگودھا فیصل آباد روڈ پر بنی سلائیڈیں انتہائی خطرناک خونی روڈپر51 افراد ہلاک اور1007 سے زائد زخمی ۔سروے رپور ٹ تفصیلات کے مطابق: پل گیارہ سے لے کر دریائے چناب کے پل تک ہیوی ٹریفک کی وجہ سے سرگودہا فیصل آباد روڑ پر انتہائی خطرناک شکل کی سلائیڈیں بن چکی ہیں۔ جس کی وجہ سے موٹر سائیکل سوار سلپ ہوکر گر جاتے ہیں اور تیز رفتار ڈمپر انکو ٹائروں کے نیچے روند تے ہوئے موت کی وادی میں لے جاتے ہیں کوئی دن ایسا نہیں جب یہ تکلیف دہ حادثات نہیں ہوتے ۔ جس موٹر سائیکل پر دو افراد سوار ہوتے ہیں وہ ناہموار سڑک پر سلپ ہونے کی وجہ سے اپنی قیمتی جانیں گنوا چکے ہیں۔محکمہ ہائی وے ٹال پلازہ کی مد میں کروڑوں روپے وصول کر نے کے باوجود آنکھیں بند کرکے سورہا ہے۔ سابق اور نو منتخب حکومتی نمائندوں نے آج تک طفل تسلیوں کے مجبور عوام کو روڑ ہموار کرکے نہیں دیا احتجاج پر صرف وعدے کئے لیکن عمل درآمد کی شرح صفر رہی پی ٹی آئی سے منتخب ہونے والے ممبرقومی اسمبلی مہر غلام محمد لالی نے الیکشن سے پہلے عوام سے با آواز بلند وعدہ کیا تھا کہ میں منتخب ہوکرسرگودہا فیصل آباد روڈ کو نیا بنا کر دم لونگا تا حال وعدہ وفا نہ ہو سکامرکزی انجمن تاجران کے صدر میاں زاہد محمود ،مظفر بھٹی اور تما م سماجی رفاعی تنظیموں نے ڈی سی چینوٹ اور ایکسیئن ہائے وے چینوٹ سے اپیل کی ہے کہ روڑ کرین کٹر کی مدد سے ان خونی خطرناک سلائیڈوں کو پلین کیا جائے تاکہ حادثات میں کمی ہوسکے ۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.